உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کی پریس کانفرنس، افغان سرزمین دہشت گردی کیلئے استعمال نہیں ہونے دیں گے

    Youtube Video

    ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا، افغان سرزمین دہشت گردی کےلیے استعمال نہیں ہونے دیں گے، سبھی غیرملکی اداروں کو تحفظ فراہم کریں گے۔

    • Share this:
      افغان طالبان نے دارالحکومت کا کنٹرول سنبھالنے کے بعدکل پہلی پریس کانفرنس کی۔ طالبان نے واضح کیا کہ وہ کوئی دشمن نہیں چاہتے اور ایک جامع حکومت بنانے کا ارادہ رکھتے ہیں ۔ططالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ وہ کوئی اندرونی یا بیرونی دشمن نہیں چاہتے ، وہ معیشت کی ترقی اور خوشحالی کے حصول کے لیے ہر ایک کے ساتھ اچھے تعلقات رکھنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان میں ایک مضبوط اسلامی حکومت قائم کی جائے گی ۔ انھوں نے مزید کہا کہ نئی حکومت میں کوئی بھی افغان سیاستدان نظر انداز نہیں کیا جائے گا۔

      ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا، افغان سرزمین دہشت گردی کےلیے استعمال نہیں ہونے دیں گے، سبھی غیرملکی اداروں کو تحفظ فراہم کریں گے۔ ہم یقین دلاتے ہیں طالبان افغانستان میں پُرامن رہیں گے۔ خواتین کو تمام حقوق حاصل ہوں گے۔

      وہیں طالبان نے یہ بھی واضح کیا کہ طالبان افغانستان میں خواتین کو اسلامی قانون کی بنیاد پر کام کرنے اور تعلیم حاصل کرنے کی اجازت دیں گے ، اور انہیں اسلامی اصولوں کے تحت تمام حقوق فراہم کیے جائیں گے ، کیونکہ خواتین معاشرے کا اہم حصہ ہیں۔ انشاء اللہ شرعی قانون کے مطابق ، ہم خواتین کو کام کرنے دیں گے ، خواتین معاشرے کا ایک اہم عنصر ہیں ، اور ہم ان کا احترام کرتے ہیں۔ زندگی کے تمام شعبوں میں ، جہاں معاشرے کو ان کی ضرورت ہے ، ان کی فعال موجودگی ہوگی۔

      امریکی صدر جو بائیڈن کے قومی سلامتی کے مشیر نے کہا کہ طالبان نے امریکی شہریوں کے لیے افغانستان سے محفوظ انخلاء کی اجازت دینے پر رضامند ہو گئے ہیں ۔  طالبان نے ہمیں مطلع کیا ہے کہ وہ شہریوں کو ہوائی اڈے تک محفوظ راستہ فراہم کرنے کے لیے تیار ہیں اور ہم انھیں اس عزم پر قائم رکھنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ عین مطابق ٹائم ٹیبل یہ ہے کہ یہ سب کیسے ہو گا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: