உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان : اقوام متحدہ کمپلیکس پر طالبان کا حملہ ، امریکہ اور برطانیہ نے کیا خبردار

    افغانستان : اقوام متحدہ کمپلیکس پر طالبان کا حملہ ، امریکہ اور برطانیہ نے کیا خبردار ۔ علامتی تصویر ۔

    اقوام متحدہ نے واضح کیا ہے کہ افغانستان کے ہیرات صوبہ میں ان کے کمپلکس پر ہوئے حملے کے لئے طالبان ذمہ دار ہیں۔ امریکہ، برطانیہ اور کئی دیگر ممالک نے حملے کو جنگی جرم قرار دیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      کابل : اقوام متحدہ (یو این) نے واضح کیا ہے کہ افغانستان کے ہیرات صوبہ میں ان کے کمپلکس پر ہوئے حملے کے لئے طالبان ذمہ دار ہیں۔ امریکہ، برطانیہ اور کئی دیگر ممالک نے حملے کو جنگی جرم قرار دیا ہے۔ اس حملے میں راکٹ سے چلنے والے گرینیڈ اور خودکار ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا۔ اس حملے میں ایک افعانستانی پولیس گارڈکی موت ہوگئی جبکہ ایک دیگر زخمی ہوگیا تھا۔ یوروپی یونین نے کہاکہ یہ واقعہ’ہم تمام کے خلاف حملہ‘ ہے اور طالبان کو اس جرم کا حساب دینا ہوگا۔

      وہیں عالمی غصہ کے درمیان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے ٹویٹ کرکے کہا کہ ہیرات میں اقوام متحدہ کا دفتر محفوظ ہے اور کسی سے بھی کوئی خطرہ نہیں ہے۔ یہ ممکن ہے کہ دفتر کے نزدیک لڑائی کی وجہ سے گارڈوں کو جوابی حملے میں نقصان ہوا ہو لیکن اب مجاہدین کے موقع پر پہنچنے کی وجہ سے اسے محفوظ کرلیا گیا ہے۔

      طالبان نے ٹوئٹ کے جواب میں افغانستان میں اقوام متحدہ مدد مشن نے کہا کہ یہ حکومت مخالف عناصر کی طرف سے جان بوجھ کر کیا گیا حملہ تھا۔ واضح ہے کہ طالبان افغانستان میں تشدد کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ابتدائی جانچ کے مطابق حکومت مخالف عناصر کی طرف سے جان بوجھ کر یہ حملہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اقوام متحدہ کے خلاف حملہ جنگی جرم کے زمرہ میں آتا ہے۔ افغانستان میں اقوام متحدہ مدد مشن کے سربراہ ڈیبورا لیون نے کہاکہ حملہ’قابل مذمت‘ ہے۔

      جوزجان میں فضائی حملے میں 21 شدت پسند ہلاک

      ادھر افغانستان کے جوزجان صوبے میں فوج کی جانب سے طالبان کے ٹھکانوں پر کئے گئے فضائی حملے میں 21 شدت پسند مارے گئے ہیں۔ شمالی علاقے میں فوج کے ترجمان محمد حنیف رضائی نے سنیچر کو یہ اطلاع دی۔ ترجمان نے بتایا کہ جمعہ کو مرغاب ، ہاسنتابین خودکش اور آس پاس کے گاؤوں میں طالبان کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا اور اس کے ساتھ ہی جوزجان صوبے کے پڑوسی صوبے ساری پل کو جوڑنے والی سڑک پر حملہ کیا گیا، جس میں 21 طالبانی مارے گئے اور 10 دیگر زخمی ہوگئے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: