ہوم » نیوز » عالمی منظر

افغانستان : اشرف غنی کے ساتھ اس لیڈر نے بھی خود کو بتایا صدر ، الگ الگ تقریب میں لیا حلف ، جانیں کیوں

مسٹر عبداللہ عبداللہ کو قبائلی لیڈروں کی حمایت حاصل ہے جنہیں ’کنگ میکر‘ سمجھا جاتا ہے۔ انہوں نے انتخابی نتائج کو منسوخ کرنے کی اپیل کی ۔ طالبان نے بھی حلف برداری تقریبات پر اختلاف سے امن کے عمل پر خطرہ کا اندیشہ ظاہر کیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 09, 2020 11:20 PM IST
  • Share this:
افغانستان : اشرف غنی کے ساتھ اس لیڈر نے بھی خود کو بتایا صدر ، الگ الگ تقریب میں لیا حلف ، جانیں کیوں
افغانستان : اشرف غنی کے ساتھ اس لیڈر نے بھی خود کو بتایا صدر ، الگ الگ تقریب میں لیا حلف

اشرف غنی نے پیر کو افغانستان کے صدر کے عہدہ کا حلف لیا۔ اشرف غنی نے تکنیکی مسائل اور دھاندلی کے الزامات اور تمام تنازعات کے درمیان 19فروری کو آئے نتائج میں صدارتی انتخابات میں جیت حاصل کی تھی ۔ انہوں نے کابل میں واقع صدارتی محل میں دوسری مرتبہ صدر کے عہدہ کا حلف لیا ۔ وہیں دوسری طرف صدر کے عہدہ کے امیدوار اور مسٹر غنی کے اہم حریف عبداللہ عبداللہ نے بھی اسی وقت ایک الگ تقریب منعقد کرکے صدر کے عہدہ کا حلف لیا۔


قابل ذکر ہے کہ امریکہ کے امن کے سفیر زیلمی خلیل زاد نے دونوں فریقین سے اس معاملہ پر اطمینان بخش حل نہیں نکلنے تک تقریب کا انعقاد ملتوی کرنے کی اپیل کی تھی ، لیکن کسی بھی فریق نے انکی اپیل نہیں مانی۔


مسٹر عبداللہ عبداللہ کو قبائلی لیڈروں کی حمایت حاصل ہے جنہیں ’کنگ میکر‘ سمجھا جاتا ہے۔ انہوں نے انتخابی نتائج کو منسوخ کرنے کی اپیل کی ۔ طالبان نے بھی حلف برداری تقریبات پر اختلاف سے امن کے عمل پر خطرہ کا اندیشہ ظاہر کیا ہے۔  خیال رہے کہ اس برس ہوئے صدارتی انتخابات میں صرف 43 فیصد رائے دہندگان نے حق رائے دہی کا استعمال کیا تھا ، جس سے انتخابات کی قانونی حیثیت پر سوال کھڑا ہوگیا ہے ۔ ڈاکٹر عبداللہ نے مسٹر غنی پر انتخابات میں دھاندلی کرنے کا الزام لگاتے ہوئے نتائج کو قبول کرنے سے انکار کردیا تھا۔

First published: Mar 09, 2020 11:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading