உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    میں پنجشیر سے فون کر رہا ہوں، کہیں نہیں بھاگا: افغانستان کے سابق نائب صدر امراللہ صالح نے افواہوں پر لگایا بریک

    میں پنجشیر سے فون کر رہا ہوں، کہیں نہیں بھاگا: افغانستان کے سابق نائب صدر امراللہ صالح نے افواہوں پر لگایا بریک

    میں پنجشیر سے فون کر رہا ہوں، کہیں نہیں بھاگا: افغانستان کے سابق نائب صدر امراللہ صالح نے افواہوں پر لگایا بریک

    Amrullah Saleh in Panjshir: افغانستان کے سابق نائب صدر امراللہ صالح نے کہا، ’ہم طالبان، پاکستانیوں، القاعدہ اور فوجی دہشت گردانہ گروپوں کے حملے کی زد میں ہیں‘۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:

      کابل: افغانستان کے سابق نائب صدر اور کارگزار صدر امراللہ صالح نے سی این این - نیوز 18 کو بتایا ہے کہ وہ کمانڈرس اور سیاستدانوں کے ساتھ پنجشیر وادی کے اندر ہیں۔ یہ خبر ایسے وقت میں آئی ہے جب یہ بتایا جارہا تھا کہ اس علاقے پر طالبان نے اپنا کنٹرول قائم کرلیا ہے۔


      رپورٹوں کو ‘بالکل بے بنیاد‘ بتاتے ہوئے امراللہ صالح نے کہا کہ پنجشیر وادی پر چار سے پانچ دنوں سے طالبان اور فوجی اہلکاروں کے ذریعہ حملہ کیا جا رہا تھا، لیکن باغیوں کے ذریعہ کسی بھی علاقے پر قبضہ نہیں کیا گیا۔ امراللہ صالح نے کہا، ’کچھ میڈیا رپورٹس کو چاروں طرف نشر کیا جارہا ہے کہ میں اپنے ملک سے بھاگ گیا ہوں۔ یہ بالکل بے بنیاد ہے۔ یہ میری آواز ہے، میں آپ سے پنجشیر وادی میں واقع اپنے بیس سے بات کر رہا ہوں۔ میں اپنے کمانڈروں اور اپنے سیاسی لیڈروں کے ساتھ ہوں‘۔


      طالبان کے حملے کے بارے میں بات کرتے ہوئے امراللہ صالح نے کہا، ’ہم صورتحال کو سنبھالنے کے لئے کام کر رہے ہیں۔ بے شک، یہ ایک مشکل صورتحال ہے، ہم طالبان، پاکستانیوں، القاعدہ اور دیگر دہشت گردانہ گروپوں کے حملے کی ضد میں ہیں۔ ہم نے میدان پر قبضہ کرلیا ہے، ہم نے اپنا علاقہ ابھی نہیں کھویا ہے‘۔


       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: