உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان : کیا کورونا ویکسین کے خلاف ہے طالبان ، ڈبلیو ایچ او نے دیا یہ بڑا جواب

    افغان طالبان نے انسداد پولیو مہم کے حوالے سے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے مہم جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے ۔ فائل فوٹو۔

    افغان طالبان نے انسداد پولیو مہم کے حوالے سے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے مہم جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے ۔ فائل فوٹو۔

    ڈبلیو ایچ او نے کہا ہے کہ ابھی تک اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ طالبان نے افغانستان میں اقتدار سنبھالنے کے بعد کورونا اور دیگر بیماریوں کے لیے ویکسینیشن پروگرام کی مخالفت کی ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      کابل : عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کہا ہے کہ ابھی تک اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ طالبان نے افغانستان میں اقتدار سنبھالنے کے بعد کورونا اور دیگر بیماریوں کے لیے ویکسینیشن پروگرام کی مخالفت کی ہے۔ ڈبلیو ایچ او کے مشرقی بحیرہ روم کے علاقے کے لیے علاقائی ڈائریکٹر رچرڈ برینان نے منگل کو کہا کہ افغانستان میں سیاسی بحران سے کورونا اور دیگر بیماریوں کے لیے ویکسینیشن پروگرام پر نمایاں اثر پڑا ہے ۔

      انہوں نے نامہ نگاروں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ابھی تک اس معاملے میں کوئی اطلاع نہیں ملی ہے جس سے کہ یہ جان سکیں کہ افغانستان میں نئی ​​حکومت ویکسینیشن پروگرام کی مخالفت کر رہی ہے ، لیکن ہم اس کے تعلق سے کافی فکر مند ہیں کیونکہ دیگر بیماریوں کے ویکسینیشن پروگرام بھی اس سے متاثر ہو رہے ہیں جو دیگر بیماریوں میں اضافہ کر سکتے ہیں۔ جہاں تک ممکن ہو ہم ویکسینیشن پروگرام میں اضافہ کریں گے۔

      افغانستان میں اب تک 153000 کورونا کیسز رجسٹرڈ ہو چکے ہیں اور سات ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں اور اس وقت ڈیلٹا وائرس کا انفیکشن زیادہ پھیل رہا ہے۔

      افغان طالبان کا انسداد پولیو مہم جاری رکھنے کا فیصلہ

      ادھر طالبان ذرائع سے موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق افغان طالبان نے انسداد پولیو مہم کے حوالے سے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے مہم جاری رکھنے کا اعلان کردیا ہے ۔ ذرائع کے مطابق افغان طالبان نے پاکستان کو انسداد پولیو سے متعلق فیصلے سے آگاہ کیا اور انسداد پولیو کے لیے پاکستان کے ساتھ دو طرفہ تعاون کو جاری رکھنے کے عزم کا اظہار بھی کیا ہے۔

      طالبان ذرائع کے مطابق ڈاکٹر ہجرت اللہ نبی زادہ کو افغان انسداد پولیو پروگرام کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے، وہ قندھار میں انسداد پولیو ایڈوائزر کے طور پر کام کر چکا ہے ۔ ذرائع کے مطابق قیادت کی منظوری کے بعد جلد افغانستان میں انسداد پولیو مہم کا آغاز کیا جائے گا ۔ افغانستان میں شروع ہونے والی انسداد پولیو مہم سے پاکستان پر مثبت اثرات پڑیں گے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: