உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان میں گڑھوں کے اندر کچرے کی طرح بھری جارہی ہیں لاشیں، سامنے آئی خوفناک تصاویر

    افغانستان میں گڑھوں کے اندر کچرے کی طرح بھری جارہی ہیں لاشیں، سامنے آئی خوفناک تصاویر ۔ (Credit- Daily Star)

    افغانستان میں گڑھوں کے اندر کچرے کی طرح بھری جارہی ہیں لاشیں، سامنے آئی خوفناک تصاویر ۔ (Credit- Daily Star)

    افغانستان سے بہت سے لوگ طالبان کے ڈر سے بھاگ گئے ۔ بہت سے لوگوں کو طالبان جنگجووں نے مار دیا ہے اور ان کی لاشوں کو ٹھکانے لگانے کیلئے بڑی بڑی قبریں کھود کر انہیں کچرے کی طرح ڈالا جارہا ہے ۔

    • Share this:
      افغانستان پر طالبان کے قبضہ کے بعد طرح طرح کی تصویریں وہاں سے سامنے آرہی ہیں ۔ خاص طور پر ملک کے جنوبی صوبہ قندھار میں طالبان کے جنگجووں کے ذریعہ لوگوں کا قتل کرنے کے بعد انہیں اجتماعی قبروں میں دفنایا جارہا ہے ۔ دعوی کیا جارہا ہے کہ طالبان لوگوں کو مارنے کے بعد انہیں کچرے کی طرح ڈسپوز کررہے ہیں ۔

      افغانستان سے بہت سے لوگ طالبان کے ڈر سے بھاگ گئے ۔ بہت سے لوگوں کو طالبان جنگجووں نے مار دیا ہے اور ان کی لاشوں کو ٹھکانے لگانے کیلئے بڑی بڑی قبریں کھود کر انہیں کچرے کی طرح ڈالا جارہا ہے ۔ طالبان نے جن لوگوں کو موت کے گھاٹ اتارا ہے ان پر ملک سے غداری اور دھوکہ دہی کے الزامات لگائے گئے تھے ۔

      طالبان جنگجووں نے جنوبی قندھار میں موجود لوگوں کو چن چن کر مارا ہے ۔ انہوں نے افغانستان سرکار سے وابستہ لوگوں ، فوجیوں ، ناٹو سے وابستہ لوگوں ، این جی او چلانے والوں اور صحافیوں پر دھوکہ دہی کا الزام لگا کر انہیں موت کے گھاٹ اتار دیا ہے ۔

      آن لائن سائٹ ڈیلی اسٹار کے مطابق انہی لوگوں کی لاش کو طالبان جنگجو بڑی بڑی قبریں کھود کر اس میں دفن کررہے ہیں ۔ کاونٹر ٹیررزم اور منظم جرائم کے ایکسپرٹ ڈیوڈ اوٹٹو کے مطابق ایسا کرنا طالبان کا پرانا طریقہ ہے ۔ اس کے ذریعہ وہ لوگوں میں خوف پیدا کرتے ہیں ۔ انہیں معلوم ہے کہ اس طرح کی بربریت دنیا بھر کی میڈیا میں دکھائی جاتی ہیں ۔

      جیسے ہی طالبان کا غلبہ بڑھنے لگا ، افغانستان میں ان لوگوں نے اپنی جانچ بچانے کی کوششیں شروع کردیں ۔ تاہم جو لوگ طالبان کے ہاتھ لگ گئے ان کے ساتھ بربریت کی ساری حدیں پار کردی گئیں ۔ اس کے علاوہ سبھی افغان فوجی وردی اتار کر انڈرگراونڈ ہوگئے ہیں ۔ کچھ لوگوں نے تو پڑوسی ممالک تک پہنچے کا بھی راستہ تلاش کرلیا ہے ۔ اب طالبان گھر گھر جاکر ہتھیار جمع کررہے ہیں ۔

      ایکسپرٹس کا کہنا ہے کہ دنیا میں اگر طالبان کو الگ تھلگ کیا جائے گا تو وہ اور بھی زیادہ خطرناک شکل اختیار کرلیں گے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: