உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہندوستان- آسٹریلیا کا دو ٹوک، افغانستان کی زمین کا کسی بھی طرح سے دہشت گردی کے لئے نہ ہو استعمال

    ہندوستان- آسٹریلیا کا دو ٹوک، افغانستان کی زمین کا کسی بھی طرح سے دہشت گردی کے لئے نہ ہو استعمال

    ہندوستان- آسٹریلیا کا دو ٹوک، افغانستان کی زمین کا کسی بھی طرح سے دہشت گردی کے لئے نہ ہو استعمال

    ہندوستان اور آسٹریلیا نے ہفتہ کے روز زور دےکر کہا کہ افغانستان کو کسی بھی حالت میں اپنی سرزمین کو دہشت گردانہ سرگرمیوں کے لیے استعمال نہیں ہونے دینا چاہیے۔ دونوں ممالک کے وزرائے خارجہ اور دفاع نے آج یہاں پہلی وزارتی سطح کے ٹو پلس ٹو مذاکرات کے دوران یہ اتفاق رائے کیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی: ہندوستان اور آسٹریلیا نے ہفتہ کے روز زور دےکر کہا کہ افغانستان کو کسی بھی حالت میں اپنی سرزمین کو دہشت گردانہ سرگرمیوں کے لیے استعمال نہیں ہونے دینا چاہیے۔ دونوں ممالک کے وزرائے خارجہ اور دفاع نے آج یہاں پہلی وزارتی سطح کے ٹو پلس ٹو مذاکرات کے دوران یہ اتفاق رائے کیا۔ وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ، وزیر خارجہ ایس جے شنکر اور ان کے آسٹریلیائی ہم منصب پیٹر ڈٹن اور مارس پین نے دوطرفہ مذاکرات میں حصہ لیا۔


      دونوں فریقوں نے افغانستان کے مسئلے پر تفصیلی تبادلہ خیال کرنے کے بعد کہا کہ افغانستان دوبارہ دہشت گردوں کی پناہ گاہ نہیں بننا چاہئے۔ ملاقات کے بعد مسٹر جے شنکر نے کہا کہ"ہم نے افغانستان پر تفصیلی بات چیت کی ہے اور اس حوالے سے دونوں ممالک کے خیالات یکساں ہیں"۔ دونوں فریقوں نے کہا کہ تمام توجہ 30 اگست کو پاس ہونے والی اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد نمبر 2593 پر ہونی چاہئے، جس میں کہا گیا ہے کہ افغانستان اپنی سرزمین کو دہشت گردانہ سرگرمیوں کے لئے استعمال نہ ہونے دے۔ انہوں نے افغانستان میں خواتین اور اقلیتی طبقات کے ساتھ ہونے والے سلوک پر بھی تشویش کا اظہار کیا۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ افغانستان میں انسانی امداد کے پروگراموں اور وہاں سے واپس آنے والے لوگوں کے مسئلے پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔




      وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے کہا کہ افغانستان بحث کا اہم موضوع رہا۔ انہوں نے کہا، ’ہم نے اس بارے میں توسیعی طور پر خیالات کا تبادلہ کیا اور ہمارا موقف ایک طرح سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2593 کی طرح ہے، جس میں یہ زور دیا گیا ہے کہ افغانستان کی زمین کا کسی بھی طور پر دہشت گردی کے لئے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے‘۔
      وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے کہا کہ افغانستان بحث کا اہم موضوع رہا۔ انہوں نے کہا، ’ہم نے اس بارے میں توسیعی طور پر خیالات کا تبادلہ کیا اور ہمارا موقف ایک طرح سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2593 کی طرح ہے، جس میں یہ زور دیا گیا ہے کہ افغانستان کی زمین کا کسی بھی طور پر دہشت گردی کے لئے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے‘۔

      دہشت گردی سے کوئی معاہدہ نہیں


      ہندوستان اور آسٹریلیا نے دہشت گردی سے کوئی معاہدہ نہیں کرنے اور اس کا مضبوطی سے مقابلہ کرنے کی اپیل کی۔ وزیر خارجہ ایس جے شنکر اور وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے اپنے آسٹریلیائی ہم منصب بالترتیب مارس پائنے اور پیٹر ڈٹن کے ساتھ یہاں پر ابتدائی 'ٹو پلس ٹو' مذاکرات کیا۔ وزیر خارجہ جے شنکر نے اپنی بات چیت کو ’مثبت‘ بتایا۔ انہوں نے ٹوئٹ کیا، ’آسٹریلیا کے ساتھ ٹو پلس مذاکرات‘ مثبت رہی۔ وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے کہا کہ افغانستان بحث کا اہم موضوع رہا۔ انہوں نے کہا، ’ہم نے اس بارے میں توسیعی طور پر خیالات کا تبادلہ کیا اور ہمارا موقف ایک طرح سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2593 کی طرح ہے، جس میں یہ زور دیا گیا ہے کہ افغانستان کی زمین کا کسی بھی طور پر دہشت گردی کے لئے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے‘۔


      وزیر خارجہ ایس جے شنکر نے کہا کہ آج 11 ستمبر کے حادثہ کی 20 ویں برسی ہے، یہ بغیر کسی معاہدے کے دہشت گردی کامقابلہ کرنے کی اہمیت کی نشاندہی کرتا ہے۔ انہوں نے کہا، ’ہم اس کے مرکز کے قریب ہیں اور ہمیں بین الاقوامی تعاون کی قدر کو سمجھنا چاہئے‘۔ انہوں نے حالانکہ کسی کا نام نہیں لیا، لیکن سمجھا جاتا ہے کہ ان کا اشارہ پاکستان کی طرف تھا۔

      Published by:Nisar Ahmad
      First published: