உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان : کابل ایئرپورٹ کے پاس امریکہ نے کی ایئر اسٹرائیک ، نشانے پر تھے ISIS-K کے دہشت گرد

    افغانستان : کابل ایئرپورٹ کے پاس امریکہ نے کی ایئر اسٹرائیک ، نشانے پر تھے ISIS-K کے دہشت گرد

    افغانستان : کابل ایئرپورٹ کے پاس امریکہ نے کی ایئر اسٹرائیک ، نشانے پر تھے ISIS-K کے دہشت گرد

    افغان میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ دھماکہ بگرا علاقہ میں ہوا ۔ دھماکہ کے کچھ دیر بعد امریکہ نے بتایا ہے کہ یہ حملہ اس نے کیا ، جس میں آئی اسی آئی ایس کے کے دہشت گردوں کو راکیٹ سے نشانہ بنایا گیا ۔

    • Share this:
      کابل : افغانستان کی راجدھانی کابل میں جمعرات کو ہوئے بم دھماکوں کے بعد اتوار کو ایک مرتبہ پھر سے دھماکہ کی خبر ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ اس دھماکہ کی آواز کافی دور تک سنی گئی ۔ افغان میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ دھماکہ بگرا علاقہ میں ہوا ۔ دھماکہ کے کچھ دیر بعد امریکہ نے بتایا ہے کہ یہ حملہ اس نے کیا ، جس میں آئی اسی آئی ایس کے کے دہشت گردوں کو راکیٹ سے نشانہ بنایا گیا ۔

      امریکی سینٹرل کمانڈ کے ترجمان بل اربن نے کہا کہ امریکہ نے کابل میں ملیٹری اسٹرائیک کی ہے ۔ افسر نے کہا کہ راکیٹ سے یہ حملہ مشتبہ آئی ایس آئی ایس کے کے دہشت گردوں کو نشانہ بنا کر کیا گیا ہے ۔

      اس حملے کا ایک ویڈیو بھی سامنے آیا ہے ، جس میں ایک گھر سے دھنواں اٹھتا ہوا دیکھا جارہا ہے ۔ افغانستان پولیس کے سربراہ نے حملہ کے بارے میں جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ امریکی انخلا کے درمیان کابل بین الاقوامی ہوائی اڈہ کے شمال مغرب میں راکیٹ گرا ، جس میں ایک بچے کی موت ہوگئی جبکہ تین دیگر افراد زخمی ہوگئے ہیں ۔



      امریکہ محکمہ خارجہ نے خفیہ جانکاری کی بنیاد پر وارننگ دیتے ہوئے کہا تھا کہ امریکی شہریوں کو اس وقت ایئرپورٹ اور اس کے سبھی دروازوں کی جانب جانے سے گریز کرنا چاہئے ۔ اس وارننگ میں خاص طور پر جنوبی گیٹ ( ایئرپورٹ سرکل) اور ایئرپورٹ کے شمال مغربی اور پنج شیر پیٹرول اسیٹیشن کے نزدیک والے گیٹ کا تذکرہ کیا گیا ہے ۔

      قابل ذکر ہے کہ 2 روز قبل بھی کابل ائیرپورٹ دھماکوں سے گونج اٹھا تھا ، جس میں 13 امریکی فوجیوں اور 2 برطانوی شہریوں سمیت 170 سے زائد افراد ہلاک ہوئے تھے، ان دھماکوں سے دو روز قبل امریکی صدر جوبائیڈن نے حملے کا الرٹ جاری کیا تھا۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: