உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شاہد آفریدی پاکستانی ٹیم کی قیادت سے مستعفی ، تاہم کھیلتے رہیں گے کرکٹ

    کراچی: ہندستان میں آئی سی سی ٹوینٹی 20 ورلڈ کپ سمیت پچھلی کئی کرکٹ سيريز میں ٹیم کی ناقص کارکردگی کے بعد تنقید کا سامنا کرنے والے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی نے آخر کار اپنے کپتانی کے عہدے سے استعفی دے دیا۔

    کراچی: ہندستان میں آئی سی سی ٹوینٹی 20 ورلڈ کپ سمیت پچھلی کئی کرکٹ سيريز میں ٹیم کی ناقص کارکردگی کے بعد تنقید کا سامنا کرنے والے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی نے آخر کار اپنے کپتانی کے عہدے سے استعفی دے دیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      کراچی: ہندستان میں آئی سی سی ٹوینٹی 20 ورلڈ کپ سمیت پچھلی کئی کرکٹ سيريز میں ٹیم کی ناقص کارکردگی کے بعد تنقید کا سامنا کرنے والے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان شاہد آفریدی نے آخر کار اپنے کپتانی کے عہدے سے استعفی دے دیا۔
      آفریدی نے کہاکہ ٹیم کے گزشتہ چند ٹورنامنٹ میں خراب کارکردگی کے بعد سے ہو رہی تنقید کے بعد میں کپتانی چھوڑ رہا ہوں۔یہ میرا خود کا فیصلہ ہے۔ انہوں نے ساتھ ہی کہا وہ کپتانی کے عہدے سے بھلے ہی استعفی دے رہے ہیں لیکن وہ کرکٹ کھیلنا جاری رکھیں گے۔
      ایشیا کپ میں مایوس کن کارکردگی کے بعد پاکستانی ٹیم کی ٹوینٹی 20 ورلڈ کپ میں انتہائی ناقص کارکردگی رہی اور ٹیم کو گروپ مرحلے میں ہی ہار کر ٹورنامنٹ سے باہر ہو جانا پڑا تھا۔ٹیم کی اس مایوس کن کارکردگی کے بعد آفریدی کو ہر طرف سےتنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا۔پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے بھی گذشتہ دنوں اس بات کے اشارے دے دیے تھے کہ بطور کپتان 36 سالہ آفریدی کا یہ آخری ٹورنامنٹ ہو گا۔
      آفریدی نے ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں کہاکہ میں اپنے مداحوں کو یہ مطلع کرنا چاہتا ہوں کہ میں بطور کپتان ٹیم سے ہٹ رہا ہوں لیکن بطور کھلاڑی میں انتخاب کیلئے دستیاب رہوں گا۔ میں اپنے ملک کے لیے کھیلنا چاہتا ہوں۔


      انہوں نے کہاکہ میں اللہ کا بے حد شکرگزار ہوں کہ مجھے یہ فیصلہ کرنے کا حوصلہ دیا۔میں نے پوری وفاداری سے اپنی ٹیم کی خدمت کی اور مجھے اس بات کا فخر ہے۔اپنے ملک کے لیے کھیلنا میرے لیے اعزاز کی بات ہے۔
      انہوں نے پی سی بی کا بھی شکریہ کرتے ہوئے کہاکہ میں اپنے ملک کے کرکٹ بورڈ کا بھی تہہ دل سے شکرگزار ہوں کہ اس نے مجھے ٹیم کی قیادت کرنے کا موقع دیا۔میں بطور کھلاڑی ہمیشہ دستیاب رہوں گا۔میں اپنے حامیوں کا بھی شکر گزار ہوں کہ انہوں نے مشکل وقت میں میرا ساتھ دیا۔
      First published: