ہوم » نیوز » عالمی منظر

ایئر اسٹرائک کے 32 دن بعد بالاکوٹ پہنچے پاکستانی صحافیوں نےمانا پہلے جیسا نہیں ہے سب کچھ

بالاکوٹ کے کچھ علاقوں کو ابھی بھی پاکستانی نیم فوجی دستوں نے گھیر رکھا ہے اور یہاں پر کسی کو جانے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔

  • Share this:
ایئر اسٹرائک کے 32 دن بعد بالاکوٹ پہنچے پاکستانی صحافیوں نےمانا پہلے جیسا نہیں ہے سب کچھ
بالاکوٹ کے کچھ علاقوں کو ابھی بھی پاکستانی نیم فوجی دستوں نے گھیر رکھا ہے اور یہاں پر کسی کو جانے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔

پلوامہ حملے کے 13دن بعد ہی ہندستانی فضائیہ نے پاکستان کے بالاکوٹ میں ایئراسٹرائک کر کے جیش محمد کے ٹھکانوں کا خاتمہ کر دیاتھا۔ ہندستان بھلے ہی بالاکوٹ میں ایئر اسٹرائک کی بات دنیا کے سامنے پر زور طریقے سے رکھتا رہا ہو لیکن پاکستان اس ایئر اسٹرائک کو ماننے سے انکار کرتا رہا ہے۔ بالاکوٹ ایئراسٹرائک کے 32 دن بعد اب پاکستان کی فوج صحافیوں کے ایک گروپ کو لیکر وہاں پہنچی جہاں ہندستان کی فضائیہ نے اسٹرائک کی تھی۔

بتایا جاتا ہے کہ بالاکوٹ کے کچھ علاقوں کو ابھی بھی پاکستانی نیم فوجی دستوں نے گھیر رکھا ہے اور یہاں پر کسی کو جانے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔


بتایا جارہا ہے کہ جس علاقے میں ہندستانی فضائیہ کی طرف سے ایئر اسٹرائک کی گئی ہے اس پورے علاقے کو پاکستان کی فرنٹیر کور کی نگرانی میں رکھا گیا ہے۔ ذرائع کی مانیں تو 28 مارچ کو پاکستان کی فوج نے پاکستان کے 8 میڈیا گروپ کے صحافیوں کو باقاعدہ سروس ہیلی کاپٹر سے اس علاقے کا دورہ کرایا۔ صبح 10 بجے سے دوپہر 3:30 بجے تک صحافی بالاکوٹ میں ہی رہے۔ اس دوران میڈیا کویہ بتانے کی کوشش کی گئی کہ ہندستان بالاکوٹ کے بارے میں جو بیان دے رہا ہے ویسا یہاں پر کچھ بھی نہیں ہوا ہے۔


(سندیپ بول)

 
First published: Mar 30, 2019 09:19 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading