ہوم » نیوز » عالمی منظر

امریکہ کے آگے نہیں جھکے گا ہندوستان، روس سے معاہدہ کے بعد ایران سے تیل خریدے گا ہندوستان

انڈین آئل کارپوریشن اورمنگلور ریفائنری اینڈ پیٹروکیمکلس لمیٹیڈ نے نومبرمیں ایرانی تیل کی درآمدگی کے لئے 1.25 ملین ٹن کا معاہدہ کیا ہے۔

  • Share this:
امریکہ کے آگے نہیں جھکے گا ہندوستان، روس سے معاہدہ کے بعد ایران سے تیل خریدے گا ہندوستان
ایران کے صدر حسن روحانی کے ساتھ وزیراعظم نریندر مودی۔

امریکہ کی تمام دھمکیوں کو نظرانداز کرتے ہوئے ہندوستان نے روس سے ایس -400 میزائل کا معاہدہ کیا۔ اب ہندوستان نے امریکہ کو دوسرا جھٹکا دیا ہے۔ ہندوستان نے واضح اشارے دیئے ہیں کہ وہ امریکی پابندیوں کے باوجود ایران کے ساتھ تجارت جاری رکھے گا۔


حکومتی ریفائنرس نے ایران سے 1.25 ملین ٹن کروڈ آئل خریدنے کے لئے معاہدہ کیا ہے۔ یہی نہیں ہندوستان نے امریکی ڈالر میں ادائیگی کی جگہ روپئے میں کاروبار کرنے کی سمت میں بھی قدم بڑھانے کی تیاری کرلی ہے۔  انڈین آئل کارپوریشن اورمنگلور ریفائنری اینڈ پیٹروکیمکلس لمیٹیڈ نے نومبرمیں ایرانی تیل کی درآمدگی کے لئے 1.25 ملین ٹن کا معاہدہ کیا ہے۔


دراصل امریکہ 4 نومبر سے ایران سے تیل خریدنے والے ممالک کے لئے اپنی پابندیوں کو پوری طرح سے نافذ کردے گا۔ حالانکہ ایران کے خلاف پابندی امریکہ کا دوطرفہ مسئلہ ہے، لیکن امریکہ اس میں پوری دنیا کو کھینچ چکا ہے۔ امریکہ کا واضح طور پرکہنا ہے کہ نومبر کے بعد اگرکسی ملک نے ایران کے ساتھ تجارت جاری رکھا تو وہ امریکہ کے ساتھ تجارت نہیں کرپائے گا۔


حالانکہ ہندوستان نے ایران کے ساتھ تجارت جاری رکھنے کا فیصلہ لیا ہے۔ ایسے میں روس سے ایس -400 ڈیل کے بعد یہ ایک طرح سے ہندوستان کے ذریعہ امریکہ کو دیا گیا دوسرا جھٹکا ہوگا۔

اس سے قبل  ہندوستان کے دورے پر آئے روس کے صدر ولادیمیر پوتن اور وزیر اعظم نریندر مودی کے درمیان آج یہاں ہوئی وفد کی سطح کی میٹنگ میں اس سودے پر دستخط کئے گئے۔ ہندوستان 5.43 ارب ڈالر یعنی تقریباً 40  ہزارکروڑ روپئے میں فضا سے فضا میں مارکرنے والے ان غیرمعمولی میزائیلوں کے پانچ اسکوارڈن خریدے گا۔ میزائیلوں کی سپلائی دستخط ہونے کے دوسال کے اندریعنی 2020 تک شروع ہوجائے گی۔
First published: Oct 06, 2018 12:10 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading