உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    چین کے بعد اب پاکستان کومضبوط کررہا ہے ترکی ، خفیہ رپورٹ میں ہوا یہ بڑا انکشاف

    چین کے بعد اب پاکستان کومضبوط کررہا ہے ترکی ، خفیہ رپورٹ میں ہوا یہ بڑا انکشاف ۔ علامتی تصویر ۔

    پاکستان (Pakistan) بڑی تعداد میں بغیر پائلٹ والے جاسوسی اور حملہ کرنے والے طیاروں کی خریداری پر زور دے رہا ہے ۔ اس کیلئے نہ صرف وہ روس کی طرف جھولی پھیلا رہا ہے بلکہ ترکی اور چین جیسے اپنے دوست ممالک کی بھی مدد لے رہا ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : پاکستان کو ہندوستان کے ساتھ ہر جنگ میں شرمناک شکست ملی ہے ۔ کشمیر میں دہشت گردوں کے ذریعہ پراکسی وار  (Proxy War)  میں بھی اس کو منہ کی کھانی پڑ رہی ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ ہندوستانی علاقوں میں جاسوسی کرنے اور کسی نقصان کے بغیر ہندوستان میں مستقبل کی لڑائیوں میں جیت حاصل کرنے کیلئے پاکستان اپنی حکمت عملی تبدیل کررہا ہے ۔ پاکستان بڑی تعداد میں بغیر پائلٹ والے جاسوسی اور حملہ کرنے والے طیاروں کی خریداری پر زور دے رہا ہے ۔ اس کیلئے نہ صرف وہ روس کی طرف جھولی پھیلا رہا ہے بلکہ ترکی اور چین جیسے اپنے دوست ممالک کی بھی مدد لے رہا ہے ۔ خفیہ رپورٹ کے مطابق پاکستان ترکی سے کامیکاز ڈرون خریدنے کی تیاری میں ہے ۔ اس کو سوسائڈ ڈرون بھی کہا جاتا ہے ۔

      اس ڈرون کی رینج 10 کلو میٹر تک ہے اور یہ ایک مرتبہ میں چھ راکٹ اپنے ساتھ لے جاسکتا ہے ۔ ایک گراونڈ اسٹیشن سے ریموٹ میں ایک ساتھ دس ڈرون کو آپریٹ کرسکتا ہے ۔ وہیں چین سے بھی آرمڈ ڈرون کا سودہ ہوچکا ہے ۔ پاکستان چین سے ونگ لونگ II کے دو اضافی سسٹم بھی لے رہا ہے ، جو کہ اسی سال پاکستانی فضائیہ کو مل جائیں گے ۔

      اس سے پہلے تین ون گلونگ II سسٹم پاکستان کے پاس موجود ہیں ، جو اس کو اسی سال ملے ہیں ۔ یہ ایک نیکسٹ جنریشن میڈیم آلٹیٹیوڈ لانگ انڈیورینس اور آرمڈ ڈرون ہے ۔ اس سے پہلے پاکستانی چین کے CH-4 ڈرون کا استعمال کررہا ہے ۔ ذرائع کی مانیں تو پاکستانی فوج اور چینی کمپنی مل کر سوسائڈ ڈرون WS-43, CH-901, ZT-39v کو مشترکہ طور پر بنانے کیلئے بات چیت کررہی ہیں ۔

      چین کی ٹیم کا دعوت

      یہی نہیں پاکستانی فوج نے تو چین سے 17 سے 22 اگست کے درمیان چار سے پانچ رکنی ٹیم کو پاکستان بھیجنے کیلئے کہا ہے ۔ تاکہ جوائنٹ پروڈکشن بات چیت ہوسکے ۔ وہیں پاکستان نے روس سے بھی منی یو اے وی لینے کی تیاری پوری کرلی ہے ۔ روس کی ایک ٹیم اسی ہفتہ منی یو اے وی S-250 کے ٹرائل کیلئے پاکستان پہنچ رہی ہے ۔ اس ٹرائل سے پہلے پاکستان کی ایک کمپنی نے گزشتہ ماہ ہی فوج کے ایک درجن سے زیادہ افسران کو مظفرآباد ایئرفیلڈ پر S-250 کو آپریٹ کرنے کی ٹریننگ بھی دیدی ہے ۔

      روس کے یو اے وی کا ٹرائل

      ان منی یو اے وی کا ٹرائل 26 جولائی سے 13 اگست کے درمیان بہاول پور ، تربت اور مظفرآباد میں کیا جارہا ہے ۔ حال ہی میں پاکستان نے ہندوستانی سرحد کے انتہائی قریب پرانے پڑ چکے اپنے ایئر اسٹرپ کو ڈرون کے آپریشن کیلئے درست کروایا ہے ۔ مانا جارہا ہے کہ پاکستان اب ہندوستان پر یو اے وی کے ذریعہ لڑائی کی تیاری کررہا ہے ، لیکن اس کو شاید یہ نہیں معلوم کہ ہندوستان اس کی ہر نبض کو اچھی طرح سے پہچانتا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: