بائیڈن کی ایشیا- پیسیفک دورے میں تخفیف کے بعد امریکی سفارتکاری کو لگا جھٹکا! کواڈ سمٹ ہوئی منسوخ

بائیڈن کی ایشیا- پیسیفک دورے میں تخفیف کے بعد امریکی سفارتکاری کو لگا جھٹکا! کواڈ سمٹ ہوئی منسوخ(فائل تصویر)

بائیڈن کی ایشیا- پیسیفک دورے میں تخفیف کے بعد امریکی سفارتکاری کو لگا جھٹکا! کواڈ سمٹ ہوئی منسوخ(فائل تصویر)

امریکہ نے جی-7سربراہی اجلاس اور پاپوا نیو گنی میں ان کے پروگراموں میں شرکت کے لیے اپنے بہت سے اتحادیوں کے رہنماؤں بشمول ہندوستان کے وزیر اعظم نریندر مودی کو مدعو کیا تھا

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • Washington
  • Share this:
    امریکی صدر جو بائیڈن کے اچانک اپنے ایشیا پیسیفک کا دورہ مختصر کرنے کے فیصلے کو امریکی سفارت کاری کے لیے ایک بڑا جھٹکا قرار دیا جا رہا ہے۔ صدر کو یہ قدم امریکہ میں قرض کی حد پر جاری تنازعہ کی وجہ سے اٹھانا پڑا۔ جس کی وجہ سے آسٹریلیا میں منعقد ہونے والے کواڈرینگولر سیکیورٹی ڈائیلاگ (کواڈ) کا سربراہی اجلاس منسوخ کرنا پڑا۔ اس کے ساتھ بائیڈن کا پاپوا نیو گنی کا مشہور دورہ بھی منسوخ کر دیا گیا ہے۔

    بائیڈن نے منگل کی رات یہ اعلان کیا کہ انہیں اپنی ایشیا پیسفک خطے کے دورے میں تخفیف کرنی پڑ رہی ہے۔ اس کے بعد بدھ کو صبح آسٹریلیا کے وزیراعظم اینتھونی البانیز نے تصدیق کردی کہ سڈنی میں ہونے والی کواڈ میٹنگ منسوخ ہوگئی ہے۔ اس کے کچھ دیر پہلے البانیز نے امید ظاہ رکی تھی کہ بائیڈن کے نہ اانے کے باوجود ہندوستان، آسٹریلیا اور جاپان کے وزیراعظم کواڈ چوٹی کانفرنس میں شامل ہوں گے۔ لیکن کچھ ہی گھنٹوں میں انہیں اس کے برعکس اعلان کرنا پڑا۔

    اب یہ امکان ظاہر کیا گیا ہے کہ جاپان کے ہیروشیما میں ہونے جارہے جی-7 چوٹی کانفرنس کے دوران ہی کواڈ کے رکن ممالک کے لیڈر الگ وقت نکال کر بات چیت کریں گے۔ بائیڈن نے اعلان کیا ہے کہ وہ بدھ کو واشنگٹن سے ہیروشیما کے لیے روانہ ہوں گے اور اتوار کو امریکہ واپس لوٹ جائیں گے۔

    یہ بھی پڑھیں:

    عمران خان کے گھر میں 30-40 دہشت گردوں نے لی پناہ! حکومت کی وارننگ 24 گھنٹے میں سونپئے نہیں تو۔۔۔

    ماہرین کے مطابق ایک ایسے وقت میں جب ایشیا پیسیفک کو امریکہ کی اسٹریٹجک پالیسی میں مرکزی مقام دیا گیا ہے، ملکی مجبوری کے باعث دو اہم پروگراموں کی منسوخی بائیڈن انتظامیہ کے لیے ایک جھٹکا ہے۔ اندیشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ اس سے امریکی ترجیح کے حوالے سے اعتماد کا بحران بڑھ سکتا ہے۔

    یہ بھی پڑھیں:

    'پولیس نے میرے گھر کا محاصرہ کرلیا ہے'، عمران خان نے کہا: یہ میرا آخری ٹویٹ ہوسکتا ہے

    بائیڈن کے دورے کو ہائی پروفائل بنانے کے لیے، امریکہ نے جی-7سربراہی اجلاس اور پاپوا نیو گنی میں ان کے پروگراموں میں شرکت کے لیے اپنے بہت سے اتحادیوں کے رہنماؤں بشمول ہندوستان کے وزیر اعظم نریندر مودی کو مدعو کیا تھا۔ اس کے بعد وزیر اعظم مودی کواڈ میٹنگ میں جانے والے تھے، تاہم اب انہیں اور دیگر رہنماؤں کو جی-7 سربراہی اجلاس کے بعد اپنے ملک واپس جانا پڑے گا۔
    Published by:Shaik Khaleel Farhaad
    First published: