اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ٹویٹرکےبعدبڑےپیمانےپرمیٹامیں بھی ہوگاکئی ملازمین کاصفایا! مارک زکربرگ نےمعاشی بدحالی سےکیاخبردار

    مارک زکربرگ  (فائل فوٹو)

    مارک زکربرگ (فائل فوٹو)

    مارک زکربرگ نے کہا کہ مجموعی طور پر ہم توقع کرتے ہیں کہ 2023 کا اختتام یا تو یوں ہی ہوگا یا اس سے پہلے بیش تر صارفین کو برطرف کردیا جائے گا۔ سوشل میڈیا کمپنی نے جون میں انجینئرز کی خدمات حاصل کرنے کے منصوبوں میں کم از کم 30 فیصد کمی کی تھی

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, Indiausausausausa
    • Share this:
      میٹا پلیٹ فارم انکارپوریشن (Meta Platforms Inc) اس ہفتے بڑے پیمانے پر ملازمین کی برطرفی شروع کرنے کی منصوبہ بنا رہا ہے جس سے ہزاروں ملازمین متاثر ہوں گے۔ وال سٹریٹ جرنل نے اتوار کے روز اس معاملے سے واقف لوگوں کا حوالہ دیتے ہوئے ایک رپورٹ میں اس کا ذکر کیا ہے۔ میٹا نے ڈبلیو ایس جے رپورٹ پر تبصرہ کرنے سے انکار کردیا۔

      فیس بک کے پیرنٹ میٹا نے اکتوبر میں اپنی کارکردگی میں کمزور سہ ماہی کی پیش گوئی کی تھی اور اگلے سال نمایاں طور پر مزید اخراجات کی وجہ سے میٹا کی اسٹاک مارکیٹ کی قیمت میں کمی کا خدشہ ہے۔ مایوس کن نقطہ نظر اس وقت سامنے آیا جب میٹا عالمی اقتصادی ترقی کی رفتار میں کمی، ٹِک ٹِک سے مسابقت، ایپل کی جانب سے رازداری کی تبدیلیوں، میٹاورس پر بڑے پیمانے پر اخراجات کے خدشات اور ضابطے کے ہمیشہ سے موجود خطرے کے ساتھ مقابلہ کر رہا ہے۔

      چیف ایگزیکٹیو مارک زکربرگ (Mark Zuckerberg) نے کہا ہے کہ وہ توقع کرتے ہیں کہ میٹاورس سرمایہ کاری کو پھل آنے میں تقریباً ایک دہائی لگ جائے گی۔ اس دوران اسے اخراجات کو کم کرنے کے لیے ہائرنگ، شٹر پروجیکٹس اور ٹیموں کو دوبارہ منظم کرنا پڑا۔ انھوں نے کہا کہ 2023 میں ہم اپنی سرمایہ کاری کو اعلی ترجیحی ترقی والے علاقوں کی ایک چھوٹی تعداد پر مرکوز کرنے جا رہے ہیں۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ کچھ ٹیمیں بامعنی ترقی کریں گی، لیکن زیادہ تر دیگر ٹیمیں اگلے سال فلیٹ رہیں گی یا سکڑ جائیں گی۔

      یہ بھی پڑھیں: 


      مارک زکربرگ نے کہا کہ مجموعی طور پر ہم توقع کرتے ہیں کہ 2023 کا اختتام یا تو یوں ہی ہوگا یا اس سے پہلے بیش تر صارفین کو برطرف کردیا جائے گا۔ سوشل میڈیا کمپنی نے جون میں انجینئرز کی خدمات حاصل کرنے کے منصوبوں میں کم از کم 30 فیصد کمی کی تھی، زکربرگ نے ملازمین کو معاشی بدحالی سے نمٹنے کے لیے خبردار کیا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: