نیپال میں نیا آئین نافذ ہونے کے باوجود تشدد کا سلسلہ جاری ، 3 افراد کی موت

کٹھمنڈو: نیپال میں نیا جمہوری آئین نافذ ہونے کے باوجود پرتشدد واقعات کا سلسلہ جاری ہے اورآئین کے خلاف مظاہرہ کرنے والے لوگوں پر پولیس کے ہاتھوں فائرنگ کئے جانے سے تین افراد ہلاک ہوگئے ۔

Sep 21, 2015 09:35 PM IST | Updated on: Sep 21, 2015 09:35 PM IST
نیپال میں نیا آئین نافذ ہونے کے باوجود تشدد کا سلسلہ جاری ،  3 افراد کی موت

کٹھمنڈو: نیپال میں نیا جمہوری آئین نافذ ہونے کے باوجود پرتشدد واقعات کا سلسلہ جاری ہے اورآئین کے خلاف مظاہرہ کرنے والے لوگوں پر پولیس کے ہاتھوں فائرنگ کئے جانے سے تین افراد ہلاک ہوگئے ۔ اس سےآئین نافذ کئے جانے کے بعد ایک ہفتے تک چلنے والی تقریبات کے پرامن طریقے سے منعقد ہونے کے امکانات معدوم ہوگئے ہیں۔

جنوبی نیپال کے ضلع مورنگ کے ڈپٹی پولیس سپرنٹنڈنٹ پرمود کھریل نے بتایا کہ پولیس نے ویراٹ نگر میں آئین مخالف مظاہرین پر گولی چلائی، جس سے تین مظاہرین زخمی ہوگئے۔تینوں کی حالت نازک بتائی گئی ہے۔ پولیس اور مظاہرین کے درمیان ٹکراؤ کا سلسلہ جاری ہے۔

ملک کے میدانی حصوں میں حالیہ پرتشدد واقعات میں 40 افراد ہلاک ہوگئے ۔ کل ضلع مورنگ میں آئین مخالف مظاہرے میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ کل پولیس کی فائرنگ کے بعد پرسا نامی مقام پر نافذ کردہ کرفیو آج نرم کردیا گیا۔

Loading...

Loading...