نقل مکانی کےخلاف مزاحمت کاصلہ! سعودی عرب پرتقریباً 50 قبائلی افراد کوجیل بھیجناکاالزام

سعودی عرب کے ولی عہد شیخ محمد بن سلمان (فائل فوٹو)

سعودی عرب کے ولی عہد شیخ محمد بن سلمان (فائل فوٹو)

رپورٹ میں بتایا گیا کہ قبیلے کے 15 افراد کو 15 سے 50 سال کے درمیان قید کی سزا سنائی گئی، جب کہ پانچ افراد کو موت کی سزا سنائی گئی۔ مزید 19 افراد کو حراست میں لیا گیا جن کی قسمت کے بارے میں مزید معلومات نہیں ہیں، جب کہ آٹھ افراد کو رہا کر دیا گیا ہے۔

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • Saudi Arabia
  • Share this:
    انسانی حقوق کی تنظیم القسط (Alqst) نے جمعرات کو اپنی نئی رپورٹ ’دی ڈارک سائڈ آف نیوم‘ شائع کیا، جس میں ان تمام افراد کے ناموں کا خاکہ پیش کیا گیا جو اس منصوبے کے خلاف بولنے پر حراست میں لیے گئے یا غائب کیے گئے ہیں۔ مذکورہ رپورٹ میں بے دخل کیے جانے والے افراد کے خلاف ہونے والی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی تفصیل پیش کی گئی ہے۔ اطلاعات کے مطابق 500 بلین ڈالر کی نئی سعودی میگا سٹی نیوم (Neom) میں تعمیراتی کام جاری ہیں۔

    نیوم کے منتظمین کا دعویٰ ہے کہ وہ نیو یارک سٹی سے 33 گنا زیادہ سائز کا ہو گا۔ اس میں ایک 170 کلومیٹر سیدھی لائن والا شہر، پانی پر تیرنے والا آٹھ رخا شہر اور عمودی تہہ کے ساتھ ایک ریزورٹ اور گاؤں بنانے کا منصوبہ ہے۔ یہ دنیا بھر کے دیگر شاندار اور تعمیراتی طور پر چیلنج کرنے والے منصوبوں کو بھی چیلنج کرے گا۔

    یہ منصوبہ شمال مغربی سعودی عرب کے تبوک صوبے میں تعمیر کیا جا رہا ہے، جہاں بے گھر الحویطات قبیلہ صدیوں سے مقیم ہونا کا دعویٰ کرتا ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ قبیلے کے 15 افراد کو 15 سے 50 سال کے درمیان قید کی سزا سنائی گئی، جب کہ پانچ افراد کو موت کی سزا سنائی گئی۔ مزید 19 افراد کو حراست میں لیا گیا جن کی قسمت کے بارے میں مزید معلومات نہیں ہیں، جب کہ آٹھ افراد کو رہا کر دیا گیا۔

    رپورٹ میں 2022 کے وسط سے جیل کی سزاؤں میں نمایاں توسیع کا ذکر کیا گیا ہے۔ حالیہ دور می ترکی کے سعودی قونصل خانے میں صحافی جمال خاشقجی (Jamal Khashoggi) کے قتل کے بعد سعودی عرب کو سفارتی تنہائی کا سامنا بھی کرنا پڑا۔

    یہ بھی پڑھیں: 

    سزائیں بڑھا دی گئیں:

    عبد اللہ راشد ابراہیم الحویتی اور عبداللہ دخیل اللہ الحویتی دونوں کو 50 سال قید اور 50 سال کی سفری پابندی کی سزا سنائی گئی ہے کیونکہ ان کے خاندان کی جانب سے نیوم کی تعمیر کے تحت راستہ بنانے کے لیے زبردستی بے دخل کیے جانے سے انکار کرنے کا الزام ہے۔
    Published by:Mohammad Rahman Pasha
    First published: