உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عاشق کے ساتھ انتہائی ٹائٹ جینس پہن کر ڈیٹ پر گئی لڑکی ، آٹھ گھنٹے بعد ہوگئی ایسی خوفناک حالت

    عاشق کے ساتھ انتہائی ٹائٹ جینس پہن کر ڈیٹ پر گئی لڑکی ، آٹھ گھنٹے بعد ہوگئی ایسی خوفناک حالت ۔ تصویر : ٹک ٹاک ۔

    عاشق کے ساتھ انتہائی ٹائٹ جینس پہن کر ڈیٹ پر گئی لڑکی ، آٹھ گھنٹے بعد ہوگئی ایسی خوفناک حالت ۔ تصویر : ٹک ٹاک ۔

    سیم نے اپنے ساتھ پیش آئے اس واقعہ کو ٹک ٹاک اکاؤنٹ پر شیئر کیا ، جہاں اپنی ڈیٹ سے واپس آنے کے بعد لڑکی کو ایسا انفیکشن ہوا کہ وہ سیدھی اسپتال پہنچ گئی ۔ اس کا انفیکشن اتنا بڑھ گیا کہ اسے سیدھے آئی سی یو میں داخل کروایا گیا ۔

    • Share this:
      دنیا کی ہر لڑکی فیشن کی شوقین ہوتی ہے ۔ سبھی کا دل کرتا ہے کہ وہ خوبصورت نظر آئے ۔ خاص طور پر اگر وہ اپنے پیارے کے ساتھ باہر جا رہی ہو ۔ ایسے ہی ایک واقعہ میں ایک لڑکی کو اپنی ڈیٹ پر ٹائٹ ہاف پینٹ پہننا بھاری پڑ گیا ۔ سیم نام کی لڑکی نے اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ ڈیٹ پر جانے کیلئے ٹائٹ پینٹ کا انتخاب کیا ، لیکن اسے پہن کر چلنے کی وجہ سے اس کی ران میں زخم ہوگیا ۔ زخم نے اس قدر خوفناک شکل اختیار کر لی کہ آخر کار لڑکی کو ڈیٹ کے کچھ دنوں بعد سیدھا اسپتال جانا پڑگیا ، جہاں ڈاکٹروں نے اس کو آئی سی یو میں داخل کر دیا ۔

      سیم نے اپنے ساتھ پیش آئے اس واقعہ کو ٹک ٹاک اکاؤنٹ پر شیئر کیا ، جہاں اپنی ڈیٹ سے واپس آنے کے بعد لڑکی کو ایسا انفیکشن ہوا کہ وہ سیدھی اسپتال پہنچ گئی ۔ اس کا انفیکشن اتنا بڑھ گیا کہ اسے سیدھے آئی سی یو میں داخل کروایا گیا ۔ اپنی حالت کے بارے میں سیم نے بتایا کہ ڈیٹ پر سے آنے کے کچھ دنوں بعد تک وہ اپنی کمر کے نیچے والے حصے کو محسوس نہیں کر سکتی تھی ۔ اس کی حالت اتنی خراب ہوگئی کہ چند دنوں میں ہی اسے اسپتال میں داخل ہونا پڑگیا ۔

      انفیکشن اتنا بڑھ گیا کہ اسے سیدھے آئی سی یو میں داخل کروایا گیا ۔
      انفیکشن اتنا بڑھ گیا کہ اسے سیدھے آئی سی یو میں داخل کروایا گیا ۔


      سیم اپنے بوائے فرینڈ کے ساتھ ڈیٹ پر گئی تھی ۔ اس دوران اس نے کافی ٹائٹ ہاف پینٹ پہن رکھی تھی۔ آٹھ گھنٹوں تک اس نے پینٹ پہن کر رکھی اور اس کے بعد جب وہ گھر واپس آئی تو اسے کمر کے نیچے درد رہنے لگا ۔ اس کو اپنی طبیعت خراب لگنے لگی ، جس کے بعد وہ ڈاکٹر کے پاس گئی ۔ شروعات میں اس کو کچھ اینٹی بائیوٹکس دی گئیں ۔ ڈاکٹروں کا خیال تھا کہ اسے جلد کا انفیکشن ہوگیا تھا اور ڈاکٹروں نے اسی کی دوا دی تھی ۔ لیکن سیم کی حالت بہتر نہیں ہوئی ۔ اگلے ہی دن سیم کو چلنے میں دشواری ہونے لگی ، جس کے بعد وہ رینگ کر ڈاکٹر کے پاس گئی ۔

      سیم کو چلنے میں دشواری ہونے لگی ، جس کے بعد وہ رینگ کر ڈاکٹر کے پاس گئی ۔
      سیم کو چلنے میں دشواری ہونے لگی ، جس کے بعد وہ رینگ کر ڈاکٹر کے پاس گئی ۔


      سیم جب دوسری مرتبہ ڈاکٹر کے پاس گئی تو وہاں اس کے پیر کی حالت دیکھ کر ڈاکٹروں نے اسے فوری طور پر آئی سی یو میں داخل کرلیا ۔ ڈاکٹروں نے بتایا کہ اسے سیپسس اور سیلولیٹس ہوگیا ہے ۔ انفیکشن کو روکنے کیلئے اس کو فوری طور پر آئی سی یو میں داخل کرنا پڑگیا ۔ تاہم غنیمت رہا کہ اس کی سرجری نہیں کی گئی ۔ اپنی حالت کے بارے میں سیم نے بتایا کہ اسے مسلسل اپنی پینٹ اتار کر ڈاکٹروں کو زخم دکھانا پڑ رہا تھا ، جو کہ ایک انتہائی شرمناک تجربہ تھا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: