امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کا بڑا بیان ، مشرق وسطی میں فوج بھیجنا سب سے بڑی غلطی ، ہم نے اربوں ڈالر گنوائے

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے بڑا بیان دیا ہے ۔ انہوں نے مشرقی وسطی میں امریکہ کے ذریعہ فوج بھیجے جانے کو سب سے بڑی غلطی بتایا ہے ۔

Oct 09, 2019 07:36 PM IST | Updated on: Oct 09, 2019 07:36 PM IST
امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کا بڑا بیان ، مشرق وسطی میں فوج بھیجنا سب سے بڑی غلطی ، ہم نے اربوں ڈالر گنوائے

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ

امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے بڑا بیان دیا ہے ۔ انہوں نے مشرقی وسطی میں امریکہ کے ذریعہ فوج بھیجے جانے کو سب سے بڑی غلطی بتایا ہے ۔ ٹرمپ اس سے پہلے بھی دنیا بھر میں چل رہی فوجی مہمات سے اپنا عدم اتفاق ظاہر کرچکے ہیں ۔ انہوں نے امریکی صدارتی انتخابات میں بھی اس معاملہ کو زور و شور سے اٹھایا تھا اور کہا تھا کہ وہ کوشش کریں گے کہ امریکی افواج جلد از جلد اپنے ملک میں واپس لوٹ سکیں ۔

اب انہوں نے باقاعدہ طور پر ایک ٹویٹ کرکے امریکہ کے سابق صدور پر نشانہ سادھا ہے ۔ انہوں نے لکھا کہ امریکہ نے مشرق وسطی میں لڑائی اور فوجی تعینات کرکے 8 ٹریلین ڈالر خرچ کئے ، اس میں ہم نے اپنے ہزاروں بہادر جوان گنوائے ، اس کے علاوہ سینکڑوں جوان ایسے ہیں جو بری طرح زخمی ہوئے ۔ اتنا ہی نہیں دوسری طرف بھی لاکھوں لوگ مارے گئے ۔ مشرق وسطی میں جانا ہمارے ملک کی تاریخ کا سب سے برا فیصلہ تھا ۔

ٹرمپ نے ایک دوسرے ٹویٹ میں لکھا کہ ہمارے ملک کی تاریخ میں ہم جھوٹے وعدوں اور غلط بنیاد پر جنگ میں گئے ۔ اس میں قتل عام کرنے والے ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا ، ہمیں کچھ بھی حاصل نہیں ہوا ۔ اب ہم تحمل کے ساتھ دھیرے دھیرے وہاں سے اپنے فوجیوں کو واپس بلا رہے ہیں ، ہماری توجہ بڑی تصویر پر ہے ۔

خیال رہے کہ امریکہ مشرق وسطی میں شام اور عراق میں ایک سنگین لڑائی میں الجھا ہے ۔ دراصل ان دونوں ممالک میں اس کو آئی ایس آئی ایس سے لڑنا پڑ رہا ہے ، یہاں کہ لڑائی طویل ہوتی جارہی ہے اور نتائج کچھ نہیں نکل پارہے ہیں ۔ ایسے میں ڈونالڈ ٹرمپ چاہتے ہیں کہ یہاں پر جلد سے جلد فوجی مہم ختم کی جائے ۔

ٹرمپ افغانستان میں بھی فوجی مہم ختم کرنا چاہتے ہیں اور اس سمت میں قدم بھی اٹھا چکے تھے اور طالبان سے بات چیت بھی شروع کردی گئی تھی ، لیکن مذاکرات کے دوران ایک حملے میں امریکی فوجی کی موت کے بعد انہوں نے بات چیت ختم کردی تھی۔

Loading...