உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    امریکہ کا Gun Culture بنا تشدد کی وجہ، ریسرچ گروپ نے بتایا-2002 میں اب تک 140 سے زیادہ مرتبہ ہوئی بڑے پیمانے پر فائرنگ

    امریکہ میں گن کلچر کو لے کر آئی چونکانے والی رپورٹ۔

    امریکہ میں گن کلچر کو لے کر آئی چونکانے والی رپورٹ۔

    صدر جو بائیڈن نے ابھی تک ان سخت اقدامات پر عمل درآمد نہیں کیا ہے جن کا انہوں نے پہلے وعدہ کیا تھا، بشمول بندوق کے خریداروں کے پس منظر کی جانچ شروع کرنا اور حملوں کو محدود کرنا شامل ہے۔

    • Share this:
      واشنگٹن: امریکا سے چونکا دینے والی خبر سامنے آئی ہے۔ ریسرچ گروپ گن وائلنس آرکائیو کے اعداد و شمار نے پیر کو انکشاف کیا ہے کہ 2022 سے اب تک ملک میں 140 سے زیادہ بڑے پیمانے پر فائرنگ کے واقعات ہو چکے ہیں۔ اس کے ساتھ ریسرچ گروپ نے یہ بھی بتایا کہ ملک میں 5 اجتماعی قتل ہو چکے ہیں۔ تنظیم نے کہا کہ اس نے روزانہ 7500 ذرائع سے ڈیٹا اکٹھا کرکے اور واقعات کی تعداد کو جوڑ کر یہ رپورٹ تیار کی ہے۔

      گن کنٹرول اقدامات پر بحث
      آپ کو بتادیں کہ امریکہ میں گزشتہ ایک دہائی میں نسل پرستی کے واقعات میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے۔ امریکہ میں اپنے پاس بندوق رکھنا ملک کے آئینی حقوق میں شامل ہے۔ یہ ایک بڑی وجہ ہے جس کی وجہ سے ملک میں آئے روز فائرنگ کے واقعات ہو رہے ہیں۔ اور گن کنٹرول کے اقدامات پر بحث حال ہی میں ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں ملک بھر میں کئی بڑے پیمانے پر فائرنگ کے واقعات کے بعد دوبارہ شروع ہوئی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      سوئیڈن میں قرآن شریف کی بے ادبی، ناراض سعودی عرب نے کہی یہ بڑی بات

      دوسری جانب بندوقوں پر قابو پانے کے اقدامات کے مخالفین کا کہنا ہے کہ آتشیں اسلحے کی فروخت اور استعمال کے حوالے سے کافی قوانین موجود ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ مسئلہ بندوقوں کا نہیں بلکہ بائیڈن انتظامیہ کی ناقص سماجی و اقتصادی پالیسیوں کا ہے، جس کی وجہ سے غربت میں مزید اضافہ ہوا ہے۔ بے گھر اور مجموعی سماجی ہلچل مچی ہوئی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Chinaمیں کورونا کا قہر، شنگھائی میں لاک ڈاون کے بعد پہلی موت، ایک دن میں 3لوگوں نے توڑا دم

      بائیڈن انتظامیہ کی کوشش
      بائیڈن انتظامیہ حالیہ بڑے پیمانے پر فائرنگ سے نمٹنے کے لیے نئے اقدامات کرنے جارہی ہے، جس میں ملک میں واقعات کو روکنے کے لیے 'گھوسٹ گن ' کے پھیلاؤ کو روکنے کی تجویز بھی شامل ہے، جس میں گھٹ رہے واقعات پر روک لگائی جاسکے۔

      واضح رہے کہ 'گھوسٹ گن' وہ ہے جو فائر آرمس کے پرزوں میں خریدا جاتا ہے اور خریدار ی جانب سے اکٹھا کیا جاتا ہے۔ تاہم، صدر جو بائیڈن نے ابھی تک ان سخت اقدامات پر عمل درآمد نہیں کیا ہے جن کا انہوں نے پہلے وعدہ کیا تھا، بشمول بندوق کے خریداروں کے پس منظر کی جانچ شروع کرنا اور حملوں کو محدود کرنا شامل ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: