உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Security Council کی میٹنگ میں یوکرین پر روس کے رویے میں آئی تبدیلی، امریکہ کے ساتھ کی امن کی پیروی

    یوکرین کو لے کر پوتن کے رویے میں آئی بڑی تبدیلی۔ (فائل تصویر)

    یوکرین کو لے کر پوتن کے رویے میں آئی بڑی تبدیلی۔ (فائل تصویر)

    سلامتی کونسل نے اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیو گوٹریس پر زور دیا ہے کہ وہ اس معاملے پر اپنے خیالات اور رہنمائی سے آگاہ کریں۔ گوٹیریس نے یوکرین کے مسئلے کے حل میں سلامتی کونسل کے تعاون کا خیرمقدم کیا ہے۔

    • Share this:
      اقوام متحدہ: مہینوں کے بعد یوکرین پر روس کا موقف بدل گیا ہے۔ جمعہ کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں روس نے دیگر 14 رکن ممالک کے ساتھ مل کر یوکرین میں امن و سلامتی کی صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کیا۔ وہاں انہوں نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کی قیادت میں قیام امن کے لیے کوششوں کی ضرورت کا اظہار کیا۔ 24 فروری کو یوکرین پر حملے کے بعد روس کے موقف میں یہ ایک بڑی تبدیلی ہے اور یہ پہلی بار نہیں ہے کہ اس نے یوکرین پر امریکا، برطانیہ اور فرانس سے مختلف رائے کا اظہار کیا ہو۔ ہندوستان نے بھی قرارداد کی بھرپور حمایت کی ہے اور یوکرین میں امن قائم کرنے کی ضرورت کا اظہار کیا ہے۔

      سلامتی کونسل نے ناروے اور میکسیکو کی تیار کردہ امن تجویز کو متفقہ طور پر قبول کر لیا ہے۔ اس قرارداد کے مطابق سلامتی کونسل یوکرین میں امن و سلامتی کے حوالے سے صورتحال پر شدید تشویش کا اظہار کرتی ہے۔ سلامتی کونسل تمام رکن ممالک سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ اپنے بین الاقوامی تنازعات کو اقوام متحدہ کے چارٹر کے مطابق پرامن طریقے سے حل کریں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      یوکرین پر UNGA میٹنگ میں ہندوستان کی عدم شرکت، ڈچ ایلچی کے ٹویٹ کا یوں دیاگیاجواب

      سلامتی کونسل نے اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیو گوٹریس پر زور دیا ہے کہ وہ اس معاملے پر اپنے خیالات اور رہنمائی سے آگاہ کریں۔ گوٹیریس نے یوکرین کے مسئلے کے حل میں سلامتی کونسل کے تعاون کا خیرمقدم کیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Russia Ukraine War:خارکیف پرقبضے کے لئے روسی افواج کے بڑے حملے،ہتھیاروں کے ذخیرے کوکیاتباہ

      قابل ذکر ہے کہ گوٹیرس حال ہی میں کیف میں روسی صدر ولادیمیر پوتن اور یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلینسکی سے ملاقات کے لیے ماسکو گئے تھے۔ گوٹیرس کی کوششوں کی وجہ سے ہی ماریوپول میں ایزوستال اسٹیل فیکٹری میں دو ماہ سے پھنسے شہریوں کا محفوظ انخلا ممکن ہوسکا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: