ہوم » نیوز » عالمی منظر

مہینوں تک ماں کی لاش کو اس طرح گھر میں رکھے رہی بیٹی ، دیکھ کر پولیس کے بھی کھڑے ہوگئے رونگٹے

پولیس نے خاتون کے خلاف دھوکہ دہی کا الزام عائد کیا اور گھر کی تلاشی کا وارنٹ جاری کیا ۔ جب پولیس نے گھر کی تلاشی لی تو اندر کا منظر دیکھ کر اہلکاروں کے رونگٹے کھڑے ہوگئے ۔

  • UNI
  • Last Updated: Aug 04, 2021 10:46 PM IST
  • Share this:
مہینوں تک ماں کی لاش کو اس طرح گھر میں رکھے رہی بیٹی ، دیکھ کر پولیس کے بھی کھڑے ہوگئے رونگٹے
مہینوں تک ماں کی لاش کو اس طرح گھر میں رکھے رہی بیٹی ، دیکھ کر پولیس کے بھی کھڑے ہوگئے رونگٹے

واشنگٹن : پیسوں کی خاطر ماں کی لاش کو کئی ماہ تک گھر میں رکھنے والی خاتون کو لینے کے دینے پڑگئے ۔ بین الاقوامی میڈیا کے مطابق یہ حیران کن واقعہ امریکی ریاست آکنساس میں پیش آیا ، جہاں ایک خاتون نے پیسوں کی خاطر اپنی ماں کی لاش کے ساتھ رہنا شروع کردیا ۔ پولیس نے شکایت موصول ہونے پر گھر کی تلاشی لی تو 73 سالہ ماں کی لاش کو اخبار میں لپٹا ہوا پایا ۔ امریکی خاتون نے اکاؤنٹس سے رقم نکالنے کی خاطر کی لاش کو کئی ماہ سے گھر میں رکھا ہوا تھا ، جس کی باعث گھر میں کافی گندگی بھی ہوچکی تھی ۔


میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ 73 سالہ گلوریا پائیک کے بھائی نے 21 جولائی 2021 کو پولیس کو شکایت درج کرائی کہ ان کی بہن اگست 2020 سے لاپتہ ہیں۔ گمشدگی کی اطلاع ملنے پر پولیس نے گلوریا پائیک کے گھر کا دورہ کیا ۔ تاہم ان کی بیٹی جینی پائیک نے پولیس اہلکاروں کو گھر کی تلاشی سے روک دیا اور بینک اکاؤنٹس کی تفصیل دینے سے بھی انکار کردیا ۔ پولیس نے جینی کی باتوں کو مشکوک جانا اور بینک کی مدد سے اکاؤنٹ کی تفصیلات چیک کی ، جس سے پتہ چلا کہ 27 جولائی کو گلوریا پائیک کے اکاؤنٹ سے رقم منتقل ہوئی ہے ۔


اکاؤنٹ کی تفصیلات دیکھنے کے بعد پولیس نے خاتون کے خلاف دھوکہ دہی کا الزام عائد کیا اور گھر کی تلاشی کا وارنٹ جاری کیا ۔ جب پولیس نے گھر کی تلاشی لی تو اندر کا منظر دیکھ کر اہلکاروں کے رونگٹے کھڑے ہوگئے ۔


پیسوں کی خاطر ماں کی لاش کو کئی ماہ تک گھر میں رکھنے والی خاتون کو لینے کے دینے پڑگئے ۔
پیسوں کی خاطر ماں کی لاش کو کئی ماہ تک گھر میں رکھنے والی خاتون کو لینے کے دینے پڑگئے ۔


54 سالہ بیٹی جینی پائیک نے اپنی ماں کی لاش کو اخباروں میں لپیٹ کر بستر پر رکھا ہوا تھا ، جب کہ گھر میں جگہ جگہ انسانی فضلہ بھی پڑا ہوا تھا ۔ گھر کی تلاشی کے بعد پولیس نے گلوریا کی بیٹی جینی پائیک کو حراست میں لے کر تفتیش کی تو پتہ چلا کہ 73 سالہ خاتون کی موت 2020 کے آخر میں ہوچکی تھی ۔ تاہم ان کی بیٹی نے والدہ کی آخری رسومات ادا کرنے کی بجائے لاش کو گھر میں چھپا دیا تاکہ اپنی والدہ کے اکاؤنٹس سے رقم نکال سکے ۔

جینی پائیک نے دوران حراست بیان دیا کہ اس کی والدہ ان کی مقروض ہے اور والدہ نے وعدہ کیا تھا کہ وہ ہر ماہ سوشل سیکورٹی اکاؤنٹ سے رقم نکال کر جینی کو دے گی ، لیکن وہ مرگئی تو میں نے اپنی ماں کے بینک اکاؤنٹ تک رسائی حاصل کی ۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق پولیس نے جینی پائیک کو مالی دھوکہ دہی اور لاش کے غلط استعمال کے الزام میں گرفتار کرلیا جب کہ لاش کو پوسٹ مارٹم کیلیے لیبارٹری بھیج دیا تاکہ موت کی اصل وجہ جان سکیں۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Aug 04, 2021 10:46 PM IST