ہوم » نیوز » عالمی منظر

شوہر کے اسپرم کی وجہ سے مرنے کی کگار پر پہنچی خاتون ، پورا معاملہ جان کر اڑجائیں گے ہوش

رپورٹ میں ریسرچ کرنے والوں نے ڈاکٹروں سے اپیل کی ہے کہ وہ دوائیں لکھتے وقت نہ صرف مریض کو ہونے والے ردعمل اور الرجی کا خیال رکھیں بلکہ ان کے اہل خانہ کو بھی ایسا ہوسکتا ہے ، اس کا بھی خیال رکھیں۔

  • Share this:
شوہر کے اسپرم کی وجہ سے مرنے کی کگار پر پہنچی خاتون ، پورا معاملہ جان کر اڑجائیں گے ہوش
علامتی تصویر

امریکہ کی ایک خاتون کو روزانہ شوہر کے ساتھ سونا اور جسمانی تعلقات قائم کرنا موت کے منہ تک لے گیا ۔ مری لینڈ کی رہنے والی خاتون کی کیس اسٹڈی امریکن جرنل آف میڈیسن میں شائع ہوئی ہے ، جس میں بتایا گیا ہے کہ خاتون کو شوہر کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کرنے کی وجہ سے الرجی ہوگئی ۔ خاتون کا شوہر کچھ ادویات لے رہا تھا اور اس کی وجہ سے اس کے اسپرم کے رابطہ میں آنے کی وجہ سے خاتون کو اینافائلیکٹک ری ایکشن ہوگیا اور وہ اتنی شدید بیمار ہوگئی کہ اس کو اسپتال میں بھرتی کرانا پڑگیا ۔

امریکن جرنل آف میڈیسن میں یہ رپورٹ آل موسٹ کلڈ بائی لو : اے کاشنری کوئیٹل ٹیل کے عنوان کے ساتھ شائع ہوئی ہے ۔ دی انڈیپنڈنٹ کی خبر میں اس حوالہ سے بتایا گیا ہے کہ شوہر کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کرنے کے بعد خاتون کو صحت سے وابستہ کچھ پریشانیاں ہونے لگیں ۔ اس کو چکر آنے لگے ، ڈائریا اور ہاتھ اور پیر میں کھجلی کی شکایت ہونے لگی ۔

بعد ازاں وہ ڈاکٹروں کے پاس گئی ۔ ڈاکٹروں کو ابتدائی جانچ بلڈ پریشر کم ملا اور انہیں لگا کہ وہ سیپسس ہے ۔ اس صورت میں جسم کے کچھ اعضا کام کرنا بند کردیتے ہیں اور اس وجہ سے موت کا بھی خدشہ پیدا ہوجاتا ہے ۔ ڈاکٹروں نے اس کو آئی وی ڈرپ لگائی اور کچھ اینٹی بایوٹکس دوائیں دینی شروع کردی ۔ اس کے بعد پھر دیگر ٹیسٹ کئے گئے ، جس میں پتہ چلا کہ وہ اینافائلیکٹک ری ایکشن میں مبتلا ہے ۔

ڈاکٹروں نے اس کے بعد جانچ کی تو معلوم ہوا کہ اس کے شوہر کو بیکٹیریل انفیکشن ہے ، جس کی وجہ سے اس کو نیفسلین نام کی اینٹی بایوٹک دی جارہی تھی ۔ اس دوا میں پینیسلن بھی ہوتی ہے ۔ ڈاکٹروں کو خاتون نے بتایا کہ اس کو بچپن سے ہی پینیسلن سے الرجی ہے ۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ شوہر کے ساتھ جسنی تعلقات قائم کرنے کے دوران اس کے اسپرم کے رابطہ میں آنے کی وجہ سے وہ بھی پینیسلن کے رابطہ میں آگئی اور اس کی وجہ سے اس کو بھی الرجی ہوگئی ۔ اسپتال میں زیر علاج خاتون کا جیسے ہی بلڈ پریشر نارمل ہوا اور اس کی صحت سے وابستہ پریشانیاں کم ہونے لگیں ، تو ڈاکٹروں نے اس کو ڈسچارج کردیا ۔ تاہم ڈاکٹروں نے خاتون کو اپنے شوہر کے ساتھ جنسی تعلقات قائم کرنے سے ایک ہفتہ کیلئے منع کردیا ۔ ڈاکٹروں نے یہ ہدایت اس لئے دی تاکہ اس کے شوہر کا اینٹی بایوٹک کورس پورا ہوجائے ۔ رپورٹ میں ریسرچ کرنے والوں نے ڈاکٹروں سے اپیل کی ہے کہ وہ دوائیں لکھتے وقت نہ صرف مریض کو ہونے والے ردعمل اور الرجی کا خیال رکھیں بلکہ ان کے اہل خانہ کو بھی ایسا ہوسکتا ہے ، اس کا بھی خیال رکھیں اور مریض کو اس بابت آگاہ بھی کردیں ۔
First published: Nov 11, 2019 05:21 PM IST