உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پاکستان کے ایک مدرسے میں زبردست دھماکہ، 7 کی موت، 70 زخمی، زیادہ تر ہیں بچے

    پاکستان کے پیشاور میں دھماکہ

    پاکستان کے پیشاور میں دھماکہ

    یہ مدرسہ پیشاور کی دیر کالونی کے پاس واقع بتایا جا رہا ہے۔ دھماکے کی وجہ کیا ہے، اس کی جانچ ابھی کی جا رہی ہے۔ زخمیوں میں زیادہ تر بچے بتائے جا رہے ہیں۔

    • Share this:
      اسلام آباد۔ پاکستان کے پیشاور واقع ایک مدرسے میں ہوئے بھیانک دھماکہ میں 7 لوگ مارے گئے ہیں جبکہ 70 سے زیادہ زخمی بتائے جا رہے ہیں۔ یہ مدرسہ پیشاور کی دیر کالونی (Peshawar's Dir Colony) کے پاس واقع بتایا جا رہا ہے۔ دھماکے کی وجہ کیا ہے، اس کی جانچ ابھی کی جا رہی ہے۔ زخمیوں میں زیادہ تر بچے بتائے جا رہے ہیں۔


      ڈان سے بات چیت میں پیشاور کے سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس منصور امن نے بتایا کہ دھماکے کی وجہ کا ابھی پتہ نہیں لگ پایا ہے لیکن ابتدائی جانچ میں اس کے گیس دھماکہ ہونے کے ثبوت نہیں ملے ہیں۔ زخمیوں کو لیڈی ریڈنگ اسپتال میں بھرتی کرایا گیا ہے۔ اسپتال کے ترجمان محمد عاصم نے بتایا کہ 70 سے زیادہ زخمی ہوئے ہیں جن میں زیادہ تر بچے ہیں۔ کچھ بچوں کی حالت کافی سنگین بھی ہے۔
      منصور کے مطابق، ابتدائی جانچ میں یہ ایک آئی ای ڈی دھماکہ جیسا نظر آ رہا ہے جسے تقریبا 5 کلو دھماکہ خیز مادہ کے استعمال سے انجام دیا گیا ہے۔ فی الحال پولیس پورے علاقے اور مدرسے میں آئے لوگوں سے پوچھ گچھ کر رہی ہے۔ پولیس نے بتایا کہ جب دھماکہ ہوا تب مدرسے میں بچوں کی قرآن کی کلاس چل رہی تھی۔ کوئی انجان شخص مدرسے میں ایک بیگ رکھ گیا تھا۔ زخمیوں میں مدرسے کے کئی اساتذہ بھی شامل ہیں۔


      ڈان نیوز کے مطابق، واقعے کے بعد صوبہ خیبرپختونخوا کے وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا نے بھی جائے حادثے کا دورہ کیا اور اس موقع پر صحافیوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس وقت توجہ زخمیوں کو بہترین علاج فراہم کرنے پر ہے تاکہ وہ جلد از جلد ٹھیک ہوسکیں۔ خیال رہے کہ گزشتہ ماہ بھی خیبرپختونخوا میں دھماکے ہوئے تھے، جس کے نتیجے میں متعدد افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔
      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: