உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Azadi March:پاک کی بدحال اقتصادی صحت پر نقصان پہنچارہا ہے عمران کا مارچ، پولیس نے کی یہ اپیل

    پاکستان میں عمران خان کا آزادی مارچ، پولیس نے کی یہ اپیل۔

    پاکستان میں عمران خان کا آزادی مارچ، پولیس نے کی یہ اپیل۔

    Azadi March: پانچ دنوں کے اخراجات کے لیے محکمہ پولیس سے 14.9 کروڑ روپے کی رقم مانگی گئی تھی۔ 380 کنٹینرز کرائے پر لینے کا کہا گیا ہے۔ یہ کنٹینرز سڑکیں بلاک کرنے کے لیے استعمال ہوں گے۔ یہی نہیں چار کرینیں بھی تعینات کی جانی ہیں۔

    • Share this:
      Azadi March: پاکستان کے معاشی حالات بہت خراب ہو چکے ہیں۔ ملک کے بگڑتے معاشی بحران کے درمیان پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے احتجاجی مارچ نے ملک کی معاشی صحت کے لیے 'جذام جیسی کیفیت' پیدا کر دی ہے۔ اس احتجاجی مارچ کی وجہ سے حکومت کی سانسیں اکھڑ رہی ہیں اور پہلے سے ہی بحران زدہ معیشت کو دوہرا نقصان پہنچ رہا ہے۔ خبر رساں ایجنسی اے این آئی کے مطابق اس احتجاجی مارچ کے دوران حکومت پاکستان نے امن و امان برقرار رکھنے کے لیے 14.9 کروڑ روپے خرچ کیے ہیں۔

      پاکستانی اخبار ڈان کی رپورٹ کے مطابق پولیس حکام نے بتایا کہ حکومت نے مذکورہ رقم محکمے کی تحریری درخواست پر جاری کی ہے تاکہ ضروریات پوری کی جائیں۔ اس رقم (سپلیمنٹری گرانٹ) کی درخواست چیف کمشنر کے دفتر کی جانب سے کی گئی تھی۔ درخواست وزارت داخلہ تک پہنچی جس نے اسے وزارت خزانہ کو بھجوا دیا۔ پولیس نے حکومت سے اپنی درخواست میں کہا کہ وہ امن و امان کو برقرار رکھیں گے اور اسلام آباد کے باہر سیکیورٹی اہلکار تعینات کریں گے۔

      محکمہ پولیس کی جانب سے حکومت کو آگاہ کیا گیا ہے کہ حفاظتی نظام کو برقرار رکھنے کے لیے دیگر ضروری اشیاء کے انتظامات کیے جائیں گے۔ محکمہ نے کہا کہ حکومت نے رواں مالی سال میں بہت محدود رقم مختص کی ہے جو پہلے ہی ختم ہوچکی ہے۔ ایسے میں حکومت سے درخواست ہے کہ پی ٹی آئی کے احتجاج کے باعث امن و امان کی صورتحال کے دوران موثر حفاظتی اقدامات کو یقینی بنایا جائے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      UN Sanctions:نارتھ کوریاپرپابندی کی امریکی تجویز کوہندوستان کی حمایت،چین اورروس نے کیاویٹو

      یہ بھی پڑھیں:
      Monkeypox Test Kit in India: ملک میں منکی پاکس کا کوئی کیس نہیں لیکن تیاریاں پختہ

      پانچ دنوں کے اخراجات کے لیے محکمہ پولیس سے 14.9 کروڑ روپے کی رقم مانگی گئی تھی۔ 380 کنٹینرز کرائے پر لینے کا کہا گیا ہے۔ یہ کنٹینرز سڑکیں بلاک کرنے کے لیے استعمال ہوں گے۔ یہی نہیں چار کرینیں بھی تعینات کی جانی ہیں۔ محکمہ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ اس کے پاس امن و امان برقرار رکھنے کے لیے ان اقدامات پر خرچ کرنے کے لیے رقم نہیں تھی۔ اس لیے حکومت سے اضافی فنڈز فراہم کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: