உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اسقاط حمل کے بعد پیٹ میں ڈاکٹروں نے چھوڑ دیا بچے کا کچھ حصہ! 7ماہ تک بھیانک درد سے تڑپتی رہی خاتون

    حمل میں آنے والی مشکلات (Problems during Pregnancy)  کی وجہ سے کئی بار حالات بگڑ جاتے ہیں اور بچے کی زندگی ختم ہو جاتی ہے۔ اسقاط حمل کی حالت ماں کے لیے ذہنی اور جسمانی طور پر انتہائی تکلیف دہ ہوتی ہے۔

    حمل میں آنے والی مشکلات (Problems during Pregnancy) کی وجہ سے کئی بار حالات بگڑ جاتے ہیں اور بچے کی زندگی ختم ہو جاتی ہے۔ اسقاط حمل کی حالت ماں کے لیے ذہنی اور جسمانی طور پر انتہائی تکلیف دہ ہوتی ہے۔

    حمل میں آنے والی مشکلات (Problems during Pregnancy) کی وجہ سے کئی بار حالات بگڑ جاتے ہیں اور بچے کی زندگی ختم ہو جاتی ہے۔ اسقاط حمل کی حالت ماں کے لیے ذہنی اور جسمانی طور پر انتہائی تکلیف دہ ہوتی ہے۔

    • Share this:
      ماں بننا کسی بھی عورت کے لیے بہت خوشی کی بات ہے۔ حمل کے دوران ایک ماں ہمیشہ یہ سوچتی ہے کہ جب وہ پہلی بار اپنے بچے کو اپنی گود میں اٹھائے گی تو اسے کیسا محسوس ہوگا مگر حمل میں آنے والی مشکلات (Problems during Pregnancy)  کی وجہ سے کئی بار حالات بگڑ جاتے ہیں اور بچے کی زندگی ختم ہو جاتی ہے۔ اسقاط حمل کی حالت ماں کے لیے ذہنی اور جسمانی طور پر انتہائی تکلیف دہ ہوتی ہے۔ حال ہی میں انگلینڈ سے تعلق  (England Woman Miscarriage) رکھنے والی ایک خاتون کے اسقاط حمل سے متعلق ایک خبر کافی زیر بحث ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ اول تو عورت کو اسقاط حمل کا درد برداشت کرنا پڑا اور دوسرا اسپتال کی غلطی کی وجہ سے اس کے بچے کا کچھ حصہ عورت کے اندر (Remains of baby inside woman)  7 ماہ تک اس کے رحم میں بچا رہ گیا جس کی وجہ سے اسے بھیانک درد سے گزرنا پڑا۔

      انگلینڈ کے شہر برسلم میں رہنے والی 38 سالہ ایریکا ہال (Ericka Hall) 4 بچوں کی ماں ہیں۔ وہ اپنے پانچویں بچے کو جنم دینے والی تھیں۔ مارچ میں جب وہ اپنے 12ویں ہفتے کے اسکین کے لیے اسپتال پہنچی تو اسے پتہ چلا کہ اس کا اسقاط حمل ہو گیا ہے۔ اس کے بچے کی موت ہوگئی ہے اور خون بھی کافی بہہ رہا تھا۔

      ڈاکٹروں نے ان کے جسم میں خون  ٹرانسفیوزن کی  اور اسی رات ان کا ابورشن کر دیا گیا۔ چند ماہ بعد ان کے جسم میں شدید درد ہونے لگا۔ وہ درد سے تڑپ رہی تھیں جو وہ برداشت بھی نہیں کر سکتی تھی۔ ان کا پارٹنر اسے فوری طور پر اسپتال لے گیا جہاں اسقاط حمل کے بعد اس کے جسم سے بچے کو نکال دیا گیا۔ ڈاکٹروں نے بتایا کہ ابورشن کے بعد بچے کا کچھ حصہ ابھی بھی جسم میں موجود ہے جس کی وجہ سے انہیں یہ درد ہو رہا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: