உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Bahrain News:بحرین میں برقعہ پہنی خاتون کو نہیں دی گئی انٹری، عہدیداروں نے ہندوستانی ریسٹورنٹ کو کردیا بند

    برقعہ کو لے کر بحرین میں ہندوستانی ریسٹورنٹ کو لگا تالا۔

    برقعہ کو لے کر بحرین میں ہندوستانی ریسٹورنٹ کو لگا تالا۔

    بحرین میں حکام نے کہا ہے کہ وہ اس معاملے میں قانونی کارروائی کریں گے۔ بی ٹی ای اے نے کہا کہ وہ عوام سے بھی درخواست کرتا ہے کہ وہ ایسے واقعات کے بارے میں مطلع کریں، تاکہ اس طرح کے معاملات کی تحقیقات کی جا سکیں۔

    • Share this:
      پناما: بحرین(Bahrain) کے ادلیہ کے ایک ریسٹورنٹ میں حکام نے برقعہ پوش خاتون کو داخلے سے روک دیا۔ یہ معلومات ڈیلی ٹریبیون کی رپورٹ میں دی گئی ہے۔ ریستوراں کی سرکاری ویب سائٹ کے مطابق، یہ ایک ہندوستانی ریستوراں ہے، جو بحرین میں 1987 سے کاروبار میں ہے۔ یہ واقعہ اس وقت سامنے آیا جب ریسٹورنٹ کے عملے کی جانب سے برقعہ پوش خاتون کو داخلے سے روکنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی۔ اس ویڈیو کو بہت سے لوگوں نے شیئر کیا ہے۔ اس کے بعد ملک بھر میں ہنگامہ ہوا اور کچھ لوگوں نے ریسٹورنٹ کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا۔

      واقعہ کی اطلاع ملتے ہی بحرین ٹورازم اینڈ ایگزیبیشن اتھارٹی (BTEA) متحرک ہوگئی۔ بی ٹی ای اے نے اس معاملے کی تحقیقات شروع کی اور تمام سیاحتی دکانوں سے ہدایت کی پیروی کرنے اور زمینی قانون کی خلاف ورزی کرنے والی پالیسیوں سے گریز کرنے کو کہا۔ ڈیلی ٹریبیون نے BTEA کے حوالے سے کہا، 'ہم ان تمام اقدامات کو مسترد کرتے ہیں جو لوگوں کے خلاف امتیازی سلوک کرتے ہیں۔ خاص طور پر اپنی قومی شناخت کے حوالے سے۔‘‘ واقعے کے بعد ریسٹورنٹ نے اس معاملے پر غم کا اظہار کیا اور انسٹاگرام پر ایک پوسٹ جاری کرتے ہوئے معافی مانگی۔ ریسٹورنٹ نے ڈیوٹی منیجر کو بھی برطرف کردیا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      India ۔ Russia: ماسکوپرپابندی کےتجارتی اثرات کیاہونگے؟ روس۔ہندتعلقات کا کیا ہوگا مستقبل؟

      اس واقعہ پر ریستوراں نے کیا کہا؟
      ریسٹورنٹ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ہماری تحقیقات کی بنیاد پر ہم نے ڈیوٹی منیجر کو معطل کر دیا ہے۔ ہم 35 سال سے زیادہ عرصے سے اس خوبصورت ملک میں رہنے والے تمام ممالک کے گاہکوں کی خدمت کر رہے ہیں۔ ہمارا ریسٹورنٹ ہر ایک کے لیے ایک ایسی جگہ ہے جہاں وہ اپنے گھر والوں کے ساتھ آکر لطف اندوز ہوتے ہیں اور گھر جیسا محسوس کرتے ہیں۔ اس واقعے کے تناظر میں، ہم یہ کہنا چاہیں گے کہ یہ منیجر کی غلطی تھی۔ فی الحال اس مینیجر کو معطل کر دیا گیا ہے۔ یہ واقعہ یہ نہیں بتاتا کہ ہم کون ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:
      پاکستان میں عدم اعتماد کی تحریک سے پہلے ڈرامہ! Imran Khan حکومت کے 50 وزراء لاپتہ

      ادھر بحرین میں حکام نے کہا ہے کہ وہ اس معاملے میں قانونی کارروائی کریں گے۔ بی ٹی ای اے نے کہا کہ وہ عوام سے بھی درخواست کرتا ہے کہ وہ ایسے واقعات کے بارے میں مطلع کریں، تاکہ اس طرح کے معاملات کی تحقیقات کی جا سکیں۔ اس میں کہا گیا ہے کہ قومی شکایات اور تجاویز کے نظام تواسل کے ذریعے یا کنزیومر پروٹیکشن سنٹر کو 17007003 پر کال کرکے رپورٹ دی جا سکتی ہے۔ یہ معاملہ بحرین میں ایسے وقت سامنے آیا ہے جب ہندوستان میں ان دنوں حجاب کو لے کر تنازعہ چل رہا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: