ہوم » نیوز » عالمی منظر

روہنگیا پناہ گزینوں کو واپس بھیجنے پر بنگلہ دیش اور اقوام متحدہ کے درمیان اتفاق رائے

ڈھاکہ / جنیوا۔ بنگلہ دیش میں مقیم روہنگیا پناہ گزینوں کو میانمار واپس بھیجے جانے کے مسئلے پر اقوام متحدہ کی پناہ گزین ایجنسی اور بنگلہ دیش حکومت کے درمیان ایک مفاہمت نامہ پر دستخط کئے جا سکتے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Apr 13, 2018 09:50 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
روہنگیا پناہ گزینوں کو واپس بھیجنے پر بنگلہ دیش اور اقوام متحدہ کے درمیان اتفاق رائے
روہنگیا مہاجرین ۔ فائل فوٹو

ڈھاکہ / جنیوا۔ بنگلہ دیش میں مقیم روہنگیا پناہ گزینوں کو میانمار واپس بھیجے جانے کے مسئلے پر اقوام متحدہ کی پناہ گزین ایجنسی اور بنگلہ دیش حکومت کے درمیان ایک مفاہمت نامہ پر دستخط کئے جا سکتے ہیں۔ اقوام متحدہ پناہ گزین ہائی کمشنر کے دفتر کے ترجمان نے گزشتہ روز یہ اطلاع دی ہے۔ ترجمان نے بتایا کہ اس مفاہمت نامہ میں اقوام متحدہ کے ادارے اور بنگلہ دیش حکومت کے درمیان ان پناہ گزینوں کو محفوظ، رضاکارانہ اور احترام کے ساتھ بین الاقوامی معیار کے مطابق میانمار بھیجے جانے پر غور کیا جائے گا اور یہ بھی دیکھا جائے گا کہ کیا ان کو واپس بھیجنے کے لئے حالات بہتر ہیں۔ ترجمان آندریز مہکیک اور بنگلہ دیش کے خارجہ سکریٹری محمد شاہد الحق اس مسئلے پر جمعہ کو مفاہمت نامہ پر دستخط کریں گے۔


اس معاملے سے وابستہ ایک دیگر بنگلہ دیشی افسر نے بتایا کہ پوری کارروائی اقوام متحدہ کے معیار کے مطابق مکمل کرائی جائے گی تاکہ ان پناہ گزینوں کے واپس بھیجے جانے کی کی کارروائی میں کسی طرح کا کوئی دباؤ نہیں ہو۔ واضح رہے کہ گزشتہ سال اگست ماہ میں میانمار کے راخین صوبے میں روہنگیا کمیونٹی کے لوگوں پر فوج کی وحشیانہ کارروائی کے بعد سات لاکھ روہنگيا افراد بھاگ کر بنگلہ دیش چلے گئے تھے۔ یہ پناہ گزین بنگلہ دیش کے کوکس بازار علاقے میں پناہ گزین کیمپوں میں رہ رہے ہیں۔


اقوام متحدہ میں میانمار کے سفیر هتن لن نے بتایا کہ انہیں پوری امید ہے کہ ان کا ملک اس مسئلے پر اپریل ماہ کے آخر تک ایک معاہدے پر عمل درآمد کر ے گا تاکہ ان پناہ گزینوں کو محفوظ اور رضاکارانہ طریقے سے وطن بھیجا جا سکے۔


First published: Apr 13, 2018 09:50 AM IST