உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بنگلہ دیش انتظامیہ کیلئے مشکل بنی خالدہ ضیاء کی بگڑتی طبیعت، ہائی الرٹ پر پولیس فورس

    ذرائع کے مطابق خالدہ ضیاء شدید بیمار ہیں اور ان کے لیے کسی بھی وقت بری خبر آ سکتی ہے۔

    ذرائع کے مطابق خالدہ ضیاء شدید بیمار ہیں اور ان کے لیے کسی بھی وقت بری خبر آ سکتی ہے۔

    پولیس کے ایک سینئر اہلکار نے بتایا کہ اعلیٰ حکومتی عہدیداروں کی جانب سے پولیس اہلکاروں کو چوکس رہنے کی ہدایت کی گئی ہے تاکہ کوئی بھی سوشل میڈیا پر بی این پی کی صدر بیگم خالدہ ضیا کی جسمانی حالت کے بارے میں افواہیں نہ پھیلائے، تاکہ سیکورٹی کی صورتحال کو نقصان پہنچے۔

    • Share this:
      ڈھاکہ۔ بنگلہ دیش کی سابق وزیراعظم بیگم خالدہ ضیا (Bangladesh Former PM Begum Khaleda Zia) کی بگڑتی ہوئی صحت پڑوسی ملک کے لیے تشویش کا باعث بن گئی ہے۔ حزب اختلاف کی بڑی جماعت بنگلہ دیش نیشنلسٹ پارٹی (بی این پی) کی صدر خالدہ ضیا کی بگڑتی ہوئی حالت کے باعث ملک کی پولیس اور انتظامیہ ہائی الرٹ پر ہے۔ ڈھاکہ میٹروپولیٹن پولیس کے ایک سینئر اہلکار نے بتایا کہ اعلیٰ حکومتی عہدیداروں کی جانب سے پولیس اہلکاروں کو چوکس رہنے کی ہدایت کی گئی ہے تاکہ کوئی بھی سوشل میڈیا پر بی این پی کی صدر بیگم خالدہ ضیا کی جسمانی حالت کے بارے میں افواہیں نہ پھیلائے، تاکہ سیکورٹی کی صورتحال کو نقصان پہنچے۔
      اس دوران ملک بھر میں انٹیلی جنس سرگرمیاں تیز کر دی گئی ہیں۔ پولیس کے انچارج افسران کی چھٹیاں بھی رد کر دی گئی ہیں اور انہیں فوری طور پر اپنے اپنے کام کی جگہوں پر واپس جانے کا حکم دیا گیا ہے۔ ڈھاکہ میٹروپولیٹن پولیس (ڈی ایم پی) کے کئی ذرائع نے منگل کی رات اس معاملے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ ڈھاکہ میں کام کرنے والے پولیس افسران جو چھٹیوں سمیت مختلف وجوہات کی بناء پر ڈھاکہ سے باہر تھے انہیں بدھ کی صبح کام پر واپس آنے پر مجبور ہوئے۔

      اس کے علاوہ جن لوگوں کو ڈھاکہ سے باہر جانا تھا ان سے بھی کہا گیا ہے کہ وہ اپنا دورہ رد کر دیں۔ بی این پی ذرائع کے مطابق خالدہ ضیاء شدید بیمار ہیں اور ان کے لیے کسی بھی وقت بری خبر آ سکتی ہے۔   تین بار وزیر اعظم رہنے والے ضیاء اس وقت ایک نجی اسپتال میں زیر علاج ہیں اور ان کے اہل خانہ اور اپوزیشن رہنماؤں کا کہنا ہے کہ ان کی حالت روز بروز بگڑتی جا رہی ہے۔ گزشتہ چند ماہ سے خالدہ ضیاء کی صحت مسلسل بگڑرہی تھی۔ وہ طویل عرصے سے گٹھیا میں مبتلا ہیں۔ ان کا بائیں ہاتھ ٹیڑھا ہوگیا ہے اوروہ اپنے بائیں ہاتھ کا استعمال نہیں کرسکتی ہیں۔
      واضح رہے کہ  بدعنوانی کے معاملے میں جیل میں بند بنگلہ دیش کی سابق وزیراعظم اوربی این پی کی چیئرمین خالدہ ضیاء کے ڈاکٹرنے کہا ہے کہ فالج کے شکارہونے کے بعد خالدہ ضیاء اپنے بائیں ہاتھ کا استعمال نہیں کرپارہی تھیں۔ اس سے پہلے بھی خالدہ ضیاء (73) کو بیمار ہونے پر ہائی کورٹ کے حکم سے ہفتہ کے روز اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ انہیں ایک یتیم خانہ کے فنڈ میں بدعنوانی کے معاملے میں قصوروارقراردیئے جانے کے بعد فروری میں پانچ سال کے لئے جیل کی سزا سنائی گئی تھی۔
      بدعنوانی کے الزام میں ڈھاکہ جیل میں قید بنگلہ دیش کی سابق وزیر اعظم خالدہ ضیاء کا یہ بھی کہنا ہے کہ وہ جانتی ہیں انہیں انصاف نہیں ملے گا۔73  سالہ سابق وزیراعظم خالدہ ضیاء کو کرپشن الزامات پر 5 سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ وہ فروری 2018 سے ڈھاکہ جیل میں ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: