உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    افغانستان میں اچانک آئے سیلاب سے تباہی، 180 لوگوں کی موت، سیکڑوں زخمی اور لاپتہ

    Afghanistan Flood: طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد   (Zabihullah Mujahid) نے کہا کہ سیلاب میں 250 سے زائد افراد زخمی ہوئے جبکہ 3000 سے زائد مکانات یا تو تباہ ہوئے یا انہیں نقصان پہنچا ہے۔

    Afghanistan Flood: طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد (Zabihullah Mujahid) نے کہا کہ سیلاب میں 250 سے زائد افراد زخمی ہوئے جبکہ 3000 سے زائد مکانات یا تو تباہ ہوئے یا انہیں نقصان پہنچا ہے۔

    Afghanistan Flood: طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد (Zabihullah Mujahid) نے کہا کہ سیلاب میں 250 سے زائد افراد زخمی ہوئے جبکہ 3000 سے زائد مکانات یا تو تباہ ہوئے یا انہیں نقصان پہنچا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, IndiaAfghanistan Afghanistan Afghanistan Afghanistan
    • Share this:
      کابل۔ پاکستان کے بعد اب افغانستان (Afghanistan)  میں بھی سیلاب Afghanistan Flood سے بھاری تباہی کی اطلاعات ہیں۔ اقوام متحدہ اور حکمراں طالبان کے مطابق افغانستان میں ایک ماہ کی موسمی بارشوں Heavy Rain Fall کے باعث سیلابی صورتحال پیدا ہوئی ہے۔ اس شدید سیلاب کے دوران کم از کم 182 افراد ہلاک اور سیکڑوں زخمی ہوئے ہیں۔

      طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد   (Zabihullah Mujahid) نے کہا کہ سیلاب میں 250 سے زائد افراد زخمی ہوئے جبکہ 3000 سے زائد مکانات یا تو تباہ ہوئے یا انہیں نقصان پہنچا ہے۔ ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ کم از کم 182 افراد ہلاک ہوئے ہیں اور سب سے زیادہ اموات 16 اگست سے 21 اگست کے درمیان ہوئیں۔ ان 4 دنوں میں سیلاب نے 63 جانیں لے لیں۔







       

      اقوام متحدہ کے دفتر کے مطابق 30 دیگر افراد لاپتہ ہیں۔ اس کے ساتھ ہی 13 صوبوں میں 8200 سے زائد خاندان سیلاب سے متاثر ہوئے ہیں۔ حال ہی میں، مشرقی لوگر کے ضلع خوشی میں دیہاتیوں نے بتایا کہ سیلاب نے پہلی بار اس علاقے کو نشانہ بنایا اور جانوروں، گھروں اور زرعی زمین کو تباہ کر دیا۔ لوگ اپنا گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہیں، سب پہاڑوں میں پناہ لے رہے ہیں۔

       
      Published by:Sana Naeem
      First published: