உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    امریکہ : چڑیاگھر میں دو ہائنا کو ہوا کورونا ، جانوروں میں انفیکشن کا یہ دنیا کا پہلا کیس

    امریکہ : چڑیاگھر میں دو ہائنا کو ہوا کورونا ، جانوروں میں انفیکشن کا یہ دنیا کا پہلا کیس ۔ فائل فوٹو ۔

    امریکہ : چڑیاگھر میں دو ہائنا کو ہوا کورونا ، جانوروں میں انفیکشن کا یہ دنیا کا پہلا کیس ۔ فائل فوٹو ۔

    Coronavirus, Covid-19, Zoo, Lions; چڑیاگڑھ کے افسران نے کہا کہ کورونا پازیٹیو دونوں لکڑبگھوں میں کورونا کی ہلکی علامتیں پائی گئیں ۔ ان میں سے ایک کی عمر 22 سال اور دوسرے کی 23 سال ہے ۔ دونوں میں تھوڑی سستی ہے اور کبھی کبھی کھانسی کی پریشانی دیکھنے کو مل رہی ہے ۔

    • Share this:
      نیویارک : امریکہ کے ڈینور سے کورونا وائرس کا ایک بڑا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ یہاں ڈینور چڑیاگھر میں گیارہ شیر اور دو ہائنا جس کو ہم لگ لکڑبگھا کے نام سے جانتے ہیں ، کورونا وائرس سے پازیٹیو پائے گئے ہیں ۔ اس کی تصدیق امریکہ کی ایک لیباریٹری نے کی ہے ۔ لیب کی طرف سے کہا گیا ہے کہ ڈینور چڑیاگڑھ کے دو ہائنوں میں کورونا وائرس کیلئے مثبت ٹیسٹ کیا گیا ہے ۔ دنیا بھر میں لکڑبگھوں کے کورونا سے متاثر ہونے کا یہ پہلا معاملہ ہے ۔

      نیشنل ویٹرنری سروسیز لیباریٹیز نے جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ چڑیا گھر کے کئی شیروں کے بیمارے ہونے کے بعد لکڑبگھوں سمیت کئی جانوروں کے نمونے جانچ کیلئے لئے گئے تھے ۔ ان لکڑبگھوں کے نمونوں کی جانچ کوروراڈو اسٹیٹ یونیورسٹی کی ایک لیباریٹری میں کی گئی ، جہاں وہ کورونا پازیٹیو پائے گئے ۔ لکڑبگھوں کے علاوہ گیارہ شیر بھی وائرس سے متاثر پائے گئے ۔ اتنی بڑی تعداد میں جانوروں کے ایک ساتھ کورونا متاثر پائے جانے سے انتظامیہ میں افراتفری مچ گئی ۔

      رپورٹ کے مطابق چڑیاگھر میں کئی جانور بیمار پائے گئے ، جس کے بعد سبھی کے نمونے لئے گئے ۔ چڑیا گھر انتظامیہ نے کہا کہ کورونا پازیٹیو ہائنا فی الحال پوری طرح سے صحتیاب ہیں اور انہیں کسی بھی طرح کی کوئی پریشانی نہیں ہے ۔

      چڑیاگڑھ کے افسران نے کہا کہ کورونا پازیٹیو دونوں لکڑبگھوں میں کورونا کی ہلکی علامتیں پائی گئیں ۔ ان میں سے ایک کی عمر 22 سال اور دوسرے کی 23 سال ہے ۔ دونوں میں تھوڑی سستی ہے اور کبھی کبھی کھانسی کی پریشانی دیکھنے کو مل رہی ہے ۔

      انتظامیہ کے مطابق گزشتہ کچھ ہفتوں میں کووڈ پازیٹیو پائے گئے جانور پوری طرح سے ٹھیک ہوگئے ہیں یا پھر وہ تیزی سے شفایاب ہورہے ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: