ہوم » نیوز » عالمی منظر

سعودی عرب کے شہزادے الولید بن طلال کو چند گھنٹوں میں 18 ہزار کروڑ کا نقصان

سعودی عرب کے شہزادے الولید بن طلال کو 48 گھنٹوں میں 18،200 کروڑ روپئے کا نقصان ہو گیا ہے۔

  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سعودی عرب کے شہزادے الولید بن طلال کو چند گھنٹوں میں 18 ہزار کروڑ کا نقصان
سعودی عرب کے ارب پتی شہزادے الولید بن طلال: فائل فوٹو۔

ریاض۔ سعودی عرب کے شہزادے الولید بن طلال کو 48 گھنٹوں میں 18،200 کروڑ روپئے کا نقصان ہو گیا ہے۔ دراصل، سعودی عرب میں بدعنوانی کے خلاف جاری مہم کے تحت انہیں گرفتار کیا گیا ہے۔ گرفتاری کے بعد ان کی املاک میں مجموعی طور پر 280 کروڑ ڈالر کی گراوٹ آئی ہے۔ ان کی کمپنی کنگڈم ہولڈنگنگ کمپنی (کے ایچ سی) کی مارکیٹ ویلیو19 بلین ڈالر سے گھٹ کر 17.8 بلین ڈالر تک پہنچ گئی ہے۔


پرنس الولید بن طلال اپنی کمپنیوں میں خواتین کو ملازمت دینے کے لئے مشہور ہیں۔ ان کے ملازمین میں دو تہائی خواتین ہیں۔


کیا ہے معاملہ


سعودی عرب میں ایک نئی انسداد بدعنوانی کمیٹی نے چار وزراء ، 11 شہزادوں سمیت کئی سابق وزیروں کو حراست میں لے لیا ہے۔ گرفتار ہونے والے افراد میں ارب پتی شہزادہ الولید بن طلال بھی شامل ہیں۔

کچھ ہی گھنٹوں میں کھو دئیے کروڑوں روپئے

پیر کے روز کے ایچ سی کا شئیر چھ سال کی کم از کم سطح پر بند ہوا۔ فوربس کے مطابق، کے ایچ سی میں طلال کی 95 فی صد حصہ داری ہے جس کی مارکیٹ ویلیو9.6 بلین ڈالر (تقریبا 62400 کروڑ روپئے) ہے۔ اس رقم میں سعودی عرب میں ان کی جائیداد، کمپنی میں عالمی سرمایہ کاروں کی لگائی ہوئی پونجی، مشرق وسطی سے ہونے والی سرمایہ کاری، ہوائی جہاز، یاٹ اور زیورات کے ساتھ ساتھ دیگر اثاثے شامل ہیں۔
First published: Nov 08, 2017 05:53 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading