جرمنی میں شامی باشندے کی دھماکہ میں موت، 12 زخمی

اس نے بویریا میں موسیقی کے میلے کے دوران بم دھماکہ کردیا۔ جرمنی میں ایک ہفتہ میں یہ چوتھا واقعہ ہے۔

Jul 25, 2016 01:25 PM IST | Updated on: Jul 25, 2016 01:25 PM IST
جرمنی میں شامی باشندے کی دھماکہ میں موت، 12 زخمی

برلن ۔ جرمنی کے نورمبرگ کے پاس اسنباک شہر میں ہوئے دھماکہ میں ایک 27 سالہ شامی باشندے کی موت ہوگئی ہے جسے  جرمنی میں پناہ دینے سے انکار کردیا گیا تھا۔ اس نے بویریا میں موسیقی کے میلے کے دوران بم دھماکہ کردیا۔ جرمنی میں ایک ہفتہ میں یہ چوتھا واقعہ ہے۔ یہ بم اس شخص کے بیگ میں تھا مگر یہ واضح نہیں ہے کہ اس نے خودکشی کی ہے یا وہ اپنے ساتھ دوسروں کو بھی مارنے کا ارادہ رکھتا تھا۔ دھماکہ میں 12 افراد زخمی ہوئے ہیں ۔ تین کی حالت نازک ہے ۔ یہ 40 ہزار آبادی والا چھوٹا سا قصبہ ہے ۔

بویریا کے وزیر داخلہ جوشیم ہرمین نے بتایا ہے کہ شامی شہری دو سال قبل جرمنی آیا تھا اور دو مرتبہ پہلے بھی خودکشی کی کوشش کرچکا تھا ۔ اس نےکمر پر ایک بیگ اٹھا رکھا تھا جو دھماکہ خیز مادے اور دھات کے ٹکڑوں سے بھرا ہوا تھا جس سے کافی لوگوں کو مارا جا سکتا تھا۔ یہ بھی ہوسکتا ہے کہ اس نے کسی اسلامی تنظیم سے ترغیب پا کر حملہ کیا ہو مگر تفتیش کے بعد ہی اس کی تصدیق ہوسکے گی۔ اس قضبہ کے نزدیک نورمبرگ میں امریکی فوجی اڈہ بھی ہے۔

پچھلے ایک سال میں 10 لاکھ سے زیادہ تارکین وطن جرمنی میں داخل ہوئے ہیں ۔ یہ بیشتر افغانستان شام اور عراق کی جنگجوؤں کی وجہ سے جان بچا کر یہاں آئے ہیں ۔ امریکی سراغ رساں افسر نے بتایا ہے کہ اس بات کی جانچ کی جائے گی کہ یہ بمبار شام میں کیا کرتا تھا اور اسے پناہ دینے سے کیوں انکار کیا گیا تھا اور اس کا حملہ ذاتی نوعیت کا تھا یا سیاسی۔ اس شخص کو دھماکہ سے قبل میوزک فیسٹیول میں داخلہ کی اجازت نہیں دی گئی تھی جس کے بعد ایک ریسٹورنٹ کے باہر یہ دھماکہ ہوا۔

Loading...

Loading...