ہوم » نیوز » عالمی منظر

افغانستان میں ایک مذہبی اجتماع میں ہوئے دھماکہ میں 50 افراد جاں بحق، 83 زخمی

حملے کے متاثرین علماء تھے جو پیغمبر محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی سالگرہ کا جشن منانے کے لئے اکھٹا ہوئے تھے۔

  • Share this:
افغانستان میں ایک مذہبی اجتماع میں ہوئے دھماکہ میں 50 افراد جاں بحق، 83 زخمی
علامتی تصویر

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں منگل کو ایک خود کش حملہ آور نے بڑی تعداد میں جمع علما کو نشانہ بنایا جس میں 50 افراد ہلاک ہو گئے۔ گزشتہ چند مہینوں میں یہ کابل میں سب سے مہلک حملہ ہے۔


وزارت صحت کے ترجمان واحد مجروح نے بتایا کہ حملے میں تقریبا 83 افراد زخمی ہو گئے جن میں سے 20 کی حالت نازک بنی ہوئی ہے۔ کسی تنظیم نے اس حملے کی فوری طور پر ذمہ داری نہیں لی ہے۔


کابل پولیس سربراہ کے ترجمان بشیر مجاہد نے کہا، "حملے کے متاثرین بدقسمتی سے مذہبی علماء تھے جو پیغمبر محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی سالگرہ کا جشن منانے کے لئے اکھٹا ہوئے تھے۔"


یہ بھی پڑھیں: افغانستان میں فضائی حملے میں 20دہشت گرد ہلاک

افغانستان کے صدر اشرف غنی نے اس حملے کی مذمت کی اور اسے "اسلامی اقدار اور پیغمبر محمد کے پیروکاروں پر حملہ" قرار دیا ہے۔ وزیراعظم پاکستان عمران خان نے بھی اس حملے کی مذمت کی اور متاثرین کے تئیں تعزیت کا اظہار کیا۔
First published: Nov 21, 2018 10:59 AM IST