உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بم دھماکوں سے لرز اٹھا شام، 140 قیمتی جانیں ضائع

    دمشق۔ شام کے دارالحکومت دمشق اور حمص شہر میں ہوئے متعدد بم دھماکوں میں کم از کم 140 لوگوں کی موت ہو گئی ۔

    دمشق۔ شام کے دارالحکومت دمشق اور حمص شہر میں ہوئے متعدد بم دھماکوں میں کم از کم 140 لوگوں کی موت ہو گئی ۔

    دمشق۔ شام کے دارالحکومت دمشق اور حمص شہر میں ہوئے متعدد بم دھماکوں میں کم از کم 140 لوگوں کی موت ہو گئی ۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      دمشق۔ شام کے دارالحکومت دمشق اور حمص شہر میں ہوئے متعدد بم دھماکوں میں کم از کم 140 لوگوں کی موت ہو گئی ۔ ذرائع کے مطابق دمشق کے جنوبی علاقے سیدہ زینب ؓکے مزار کے قریب کل چار بم دھماکے ہوئے جس میں 83 لوگوں کی موت ہو گئی۔ وہیں حمص شہر میں ہوئے بم دھماکے میں 57 افراد ہلاک ہوئے۔ہلاک شدگان میں زیادہ تر عام شہری شامل ہیں۔ دمشق کا جنوبی علاقہ جہاں سیدہ زینب ؓ کا مزار واقع ہے شیعہ مسلمانوں میں سب سے مقدس مقام مانا جا تاہے۔ وہیں حمص کے الاويو کے میدان میں بھی کئی دھماکے ہوئے ۔ دونوں شہروں میں ہوئے دھماکے کی ذمہ داری خطرناک دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ (داعش)نے لی ہے۔


      دوسری طرف، امریکہ کے وزیر خارجہ جان کیری نے کہا ہے کہ شام میں جزوی جنگ بندی کے لئے روس سے ایک عارضی معاہدہ ہوا ہے۔ مسٹر کیری نے کہا کہ ان کی بات چیت روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف سے ہوئی ہے اور وہ جنگ بندی کی شرائط پر اتفاق کرتے ہیں۔ تاہم، ابھی اس معاملے پر تفصیلی بات چیت باقی ہے۔


      واضح رہے کہ فروری کے آغاز میں شام میں چل رہے تنازعہ میں شامل دنیا کے طاقتور ممالک کے درمیان اتفاق ہواتھا کہ وہ اس لڑائی کو ختم کرنے کی سمت میں کام کریں گے لیکن گزشتہ جمعہ تک یقینی بنائی گئی ٹائم لائنز پر بھی عمل آوری نہیں ہو سکی ہے اور اس بارے میں کوئی ٹھوس فیصلہ بھی نہیں کیا جا سکا ہے۔

      First published: