ہوم » نیوز » عالمی منظر

یہاں اپنوں کی لاش جلا کر کھا جاتے ہیں لوگ ، چمڑے سے لے کر ہڈیاں تک چبانے کی ہے روایت

کورونا کی وجہ سے دنیا میں لاشو کا انبار لگا ہوا ہے ۔ ہندوستان میں بھی اس وائرس کی دوسری لہر نے تباہی مچا رکھی ہے ۔ لاشوں کی آخری رسوم ادا کرنے کیلئے ویٹنگ چل رہی ہے ۔ اس درمیان دنیا میں ایک ایسا قبیلہ موضوع بحث بنا ہوا ہے جو لاشو کو جلا کر کھاجاتا ہے ۔

  • Share this:
یہاں اپنوں کی لاش جلا کر کھا جاتے ہیں لوگ ، چمڑے سے لے کر ہڈیاں تک چبانے کی ہے روایت
یہاں اپنوں کی لاش جلا کر کھا جاتے ہیں لوگ ، چمڑے سے لے کر ہڈیاں تک چبانے کی ہے روایت

ویسے تو دنیا میں کئی سارے قبائل ہیں اور ہر قبیلہ کسی نہ کسی خاص وجہ سے سرخیوں میں رہتا ہے ۔ کئی قبائل میں عجیب و غریب روایات بھی ہوتی ہیں ۔ ہندوستان میں ایک قبیلہ کی خواتین جانوروں کو سینے سے دودھ پلاتی ہیں ۔ وہیں بات اگر برازیل کے یانومامی قبیلہ کی کریں تو یہ لوگ اپنوں کی لاش جلاکر اس کو ہی کھا جاتے ہیں ۔ اس قبیلہ میں روایت ہے کہ یہاں لاش کو جلا کر کھایا جاتا ہے ۔


یانومامی قبیلہ کے لوگ جدیدیت سے کافی دور ہیں ۔ یہ لوگ ماڈرن سوسائٹی سے کوسوں دور ہیں ۔ یہاں کے لوگ اپنے روایتی طریقوں سے ہی زندگی گزارتے ہیں ۔ کپڑوں کے نام پر ان کے جسم پر صرف ایک لنگوٹ بندھا ہوتا ہے ۔ اس قبیلہ کی آخری رسوم کی روایت کافی عجیب و غریب ہے ، جہاں ہر کمیونٹی لاشوں کو یا تو جلا دیتی ہے یا دفن کردیتی ہے تو وہیں اس قبیلہ کے لوگ لاش کو جلا کر کھا جاتے ہیں ۔


یانومامی قبیلہ کے لوگوں کا ماننا ہے کہ اہل خانہ کی موت کے بعد ان کی روح کو محفوظ رکھنی پڑتی ہے ۔ روح کو محفوظ رکھنے کیلئے اس قبیلہ کے لوگ لاش کو پہلے اچھی طرح سے جلاتے ہیں ۔ جب لاش پک جاتی ہے تو پورے کنبہ کے ساتھ مل کر اس کو کھا جاتے ہیں ۔


یہی نہیں لاش کو جلانے سے پہلے سبھی رشتہ داروں کو بھی جمع کیا جاتا ہے ۔ سب مل کر لاش کھاتے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 01, 2021 05:06 PM IST