ہوم » نیوز » عالمی منظر

لندن میں پاکستانی نژاد شہریوں نے کیا نازیبا سلوک، ہندوستانی ہائی کمیشن پرپھینکےانڈے، ٹماٹر،جوتے، اور اسموک بم

برطانیہ کے کونے۔کونے میں بسے تقریبا 10ہزار پاکستانی نژاد شہری بسوں میں سوار ہوکر لندن پہنچے۔ اس کے بعد لندن کی سڑکوں پر ان سب نے ہنگامہ کھڑا کر دیا۔ احتجاجی مظاہرین نے ہندوستانی ہائی کمیشن کی عمارت پر انڈے ، ٹماٹر، جوتے ،پتھر، اسموک بم اور بوتل پھینکے۔ عمارت کی کئی کھڑکیوں کو نقصان پہنچا اور شیشے ٹوٹ گئے۔

  • Share this:
لندن میں پاکستانی نژاد شہریوں نے کیا نازیبا سلوک، ہندوستانی ہائی کمیشن پرپھینکےانڈے، ٹماٹر،جوتے، اور اسموک بم
لندن میں پاکستانی نژاد شہریوں نے ہندوستانی ہائی کمیشن پرپھینکےانڈے، ٹماٹر،جوتے، اور اسموک بم-(تصویر:انڈین ہائی کمشن لندن، ٹویٹر)۔

جموں۔کشمیر سے آرٹیکل 370 کی منسوخی کے مسئلے کو لیکر پاکستان بین الاقوامی سطح پر الگ۔تھلگ پڑ گیا ہے۔ لہذا اب پاکستان کی بوکھلاہٹ ہر روزنظر آرہی ہے۔

منگل کوپاکستانی نژاد شہریوں نے لندن میں ہنگامہ کھڑا کر دیا۔ ان سب نے ہندوستانی ہائی کمیشن کو نشانہ بناتے ہوئے پتھربازی کی اورساتھ ہی (بلڈنگ)عمارت پرانڈے بھی پھینکے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق برطانیہ کے کونے۔کونے میں بسے تقریباً 10ہزار پاکستانی نژاد شہری بسوں میں سوار ہوکر لندن پہنچے۔ اس کے بعد لندن کی سڑکوں پر ان سب نے ہنگامہ کھڑا کر دیا۔  احتجاجی مظاہرین نے ہندوستانی ہائی کمیشن کی عمارت پرانڈے، ٹماٹر، جوتے ،پتھر، اسموک بم اور بوتل پھینکے۔ عمارت کی کئی کھڑکیوں کو نقصان پہنچا اور شیشے ٹوٹ گئے۔


پاکستانی  نژاد شہریوں نے اس مخالف مظاہرے کو 'کشمیر فریڈم مارچ' کا نام دیا تھا۔ یہ مارچ پارلیمنٹ سے شروع ہوکر ہندوستانی ہائی کمیشن کی عمارت تک پہنچا۔ مظاہرین کے ہاتھ میں پاک مقبوضہ کشمیر (پی او کے) کا جھنڈا اور پوسٹرس تھے۔ ہندوستانی ہائی کمیشن نے ٹویٹر پر ایک تصویر بھی شیئر کی ہے۔ اس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ عمارت کے شیشے ٹوٹے ہوئے ہیں۔
بتادیں کہ گزشتہ ایک مہینے میں یہ دوسری مرتبہ ہے جب پاکستانی مظاہرین نے لندن میں ہندستانی ہائی کمیشن کو نشانہ بنایا ہے۔ اس سے پہلے 15 اگست کے موقع پر بھی ان سب نے مظاہرے کے دوران ہنگامہ کھڑا کردیا تھا۔
First published: Sep 04, 2019 09:43 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading