உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Hindu rituals: سعودی عرب میں دفن ہندوستانی کی لاش کو نکالا گیا! آخری ہندو رسومات کی ادائیگی کیلئے گھر روانہ

    پالانیسامی کی میت ہندوستان پہنچائی گئی۔

    پالانیسامی کی میت ہندوستان پہنچائی گئی۔

    درخواست کی بنیاد پر سفارت خانے نے بیرون ملک مقیم تارکین وطن کی موت کے ضمن ‌‌‌میں ایک لازمی دستاویز یا این او سی جاری کر دیا ہے۔ بعد میں پالانیسامی کی میت ہندوستان کو پہنچائی گئی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • INTER, IndiaSaudi ArabiaSaudi ArabiaSaudi ArabiaSaudi Arabia
    • Share this:
      جدہ: کبھی کبھی کوئی غیر معمولی واقعہ پیش آتا ہے۔ اس طرح کا واقعہ لوگوں کو چونکانے کا سبب بن سکتا ہے۔ ایک حیران کن واقعہ سعودی عرب کے جدہ شہر میں بھی پیش آیا ہے۔ ایک این آر آئی کارکن کی میت کو سعودی عرب کے ایک قبرستان سے نکالا گیا جہاں اسے دو ماہ قبل غلطی سے دفن کردیا گیا تھا۔ ہندوستانی اہلکار اسے آخری رسومات کے لیے ہندوستان واپس بھیجنے کے لیے کام کر رہے ہیں تاکہ ہندوستان میں اس کی ہندو خاندان کے مطابق آخری رسومات یعنی انتم سنسکار کیا جائے۔

      تمل ناڈو کے مدورائی ضلع سے تعلق رکھنے والے 42 سالہ اینڈیتھمی پلانی سامی (Andithamy Palanisamy) 19 مئی کو ریاض کے قریب صحرائی قصبے مجمعہ میں دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گئے تھے۔ جو کہ دیکھ بھال کا کام کر رہا تھا۔ متوفی کی اہلیہ ویداچی نے اپنے شوہر کی میت کو وطن واپس لانے کی درخواست کی ہے۔ ان کے مطابق اس نے ریاض میں ہندوستانی سفارت خانے کو نوٹرائزڈ خط بھیجا، درخواست کی بنیاد پر سفارت خانے نے بیرون ملک مقیم تارکین وطن کی موت کے ضمن ‌‌‌میں ایک لازمی دستاویز یا این او سی جاری کر دیا ہے۔ بعد میں پالانیسامی کی میت ہندوستان کو پہنچائی گئی۔


      غیر ملکی ملازمین کی لاشوں کی منتقلی یا تدفین سعودی عرب اور باقی خلیجی ممالک میں آجروں کی ذمہ داری ہے، یعنی جن کنٹراکٹرس نے ان کی ذمہ داری لی ہوتی ہے وہ اس کے ذمہ دار ہوتے ہیں۔ تاہم پالانیسامی کی لاش کو ہندوستان بھیجنے کے بجائے اسے 16 جون کو شاکرہ قبرستان میں دفن کر دیا گیا تھا۔ تامل ناڈو میں پالانیسامی کا خاندان اس کے بعد سے ہی پریشان ہوگیا تھا اور وہ جلد سے جلد لاش کو ہندوستان لانے کی مانگ کررہا تھا۔ انھیں اگلے دن تدفین کے بارے میں پتہ چلا اور انہوں نے فوری طور پر ہندوستانی سفارت خانے سے درخواست کی کہ لاش کو نکال کر گھر واپس بھیج دیا جائے۔

      ہندوستانی سفارت خانے کے اہلکاروں نے لاش کو نکالنے کے لیے دو ماہ سے زیادہ کام کیا، آخر کار اسے کھود کر ہفتے کے روز ریاض شہر منتقل کر دیا گیا۔ ہندوستانی کمیونٹی ویلفیئر عہدیداروں کے مطابق پالانیسامی کی باڈی جلد ہی ہندوستان واپس آنے کی امید ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:


      پچھلے سال بھی ہماچل پردیش کے ڈرائیور سنجیو کمار کی صوبہ جیزان میں موت نے توجہ مبذول کرائی تھی جب اس کی بیوی نے دہلی ہائی کورٹ میں اپنے شوہر کی لاش کو واپس لانے کے لیے مدد کی درخواست کی تھی اور دعویٰ کیا تھا کہ اسے سعودی عرب میں غلط طریقے سے دفن کیا گیا تھا اور یہ معاملہ زیر بحث آیا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: