உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Burkina Faso Military Coup: برکینا فاسو میں فوج نے کیا تختہ پلٹ، لائیو ٹی وی پر صدر کو ہٹایا

    فوج کے مطابق اقتدار پر قبضہ تشدد کے بغیر کیا گیا اور حراست میں لیے گئے افراد محفوظ مقام پر ہیں۔

    فوج کے مطابق اقتدار پر قبضہ تشدد کے بغیر کیا گیا اور حراست میں لیے گئے افراد محفوظ مقام پر ہیں۔

    برکینا فاسو کے فوجی عہدیداروں نے گزشتہ پیر کو ٹی وی پر کہا کہ فوجیوں نے اس ملک کو اپنے قبضے میں لے لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فی الحال ملک کی سبھی سرحدیں سیل کردی گئی ہیں، لیکن ہم یہاں کی عوام کو بھروسہ دلاتے ہیں کہ صحیح وقت آنے پر ملک میں ایک مرتبہ پھر آئینی صورتحال واپسی ہوجائے گی۔

    • Share this:
      اوگاڈوگو: مغربی افریقہ کے ملک برکینا فاسو (Burkina Faso) میں فوج نے بغاوت کرتے ہوئے حکومت کا تختہ پلٹ دیا ہے۔ دراصل، فوج نے صدر روچ کابورے کو اقتدار سے ہٹادیا اور لائیو ٹی وی پر اس فوجی بغاوت (Burkina Faso Military Coup) کا اعلان کیا ہے۔ فوج نے صدر (President) روچ مارک کرشچین کابورے کو قیدی بھی بنالیا ہے۔ فوج نے پارلیمنٹ کو بھی تحلیل کردیا۔ فوج کا کہنا ہے کہ اتنا بڑا فیصلہ لینے کے پیچھے کی وجہ ملک میں سیکورٹی کی صورتحال خراب بتایا گیا ہے۔ فوج کے مطابق، اقتدار پر قبضہ بنا کوئی تشدد کے کیا گیا ہے اور حراست میں لیے گئے لوگ محفوظ مقام پر منتقل کیے گئے ہیں۔

      برکینا فاسو کے فوجی عہدیداروں نے گزشتہ پیر کو ٹی وی پر کہا کہ فوجیوں نے اس ملک کو اپنے قبضے میں لے لیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فی الحال ملک کی سبھی سرحدیں سیل کردی گئی ہیں، لیکن ہم یہاں کی عوام کو بھروسہ دلاتے ہیں کہ صحیح وقت آنے پر ملک میں ایک مرتبہ پھر آئینی صورتحال واپسی ہوجائے گی۔ حالانکہ، یہ صحیح وقت کب آئے گا اس کے بارے میں فوج نے کسی بھی طرح کی کوئی جانکاری نہیں دی ہے۔

      واشنگٹن ٹائمس کی رپورٹ کے مطابق تختہ پلٹ کے اعلان سے پہلے فوج کی جانب سے جانکاری دی گئی تھی کہ وہاں کے صدر روچ کابورے کو قیدی بنا کر ملک کے آئین کو معطل کردیا گیا ہے۔ رپورٹ کی مانیں تو فوج نے اپنے اس قدم کو صحیح قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ کابورے ملک کے تئیں اپنی ذمہ داریاں نبھانے میں ناکام رہے ہیں۔ ان کے دور اقتدار میں سیکورٹی کی صورتحال بدحال ہوگئی تھی۔ وہ مغربی افریقی قوم کو متحد کرنے میں ناکام رہے اور اسلامی باغیوں سے بھی نہیں نمٹ پائے۔

      حکومت نیوز اسٹین آر ٹی بی پر پیر کی صبح زبردست سیکورٹی بندوبست دیکھا گیا۔ اس دوران ملک کی راجدھانی اوگادوگو میں لامیجانا سانگولے فوجی بیریکوں پر باغیوں نے قبضہ کرلیا۔ شہریوں نے بغاوت کی حمایت میں شہر میں داخلہ لیا لیکن سیکورٹی فورس نے آنسو گیس کے گولے داغے۔ کابورے کے استعفیٰ کے لئے عوامی مظاہروں کی اپیل کے ایک دن بعد یہ بغاوت ہوئی۔ حالانکہ، باغیوں نے صدر کو حراست میں لینے سے انکار کیا ہے لیکن باغیوں نے تختہ پلٹ کو انجام دیا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: