ہوم » نیوز » عالمی منظر

ہندوستان سے کشیدگی کے درمیان چین کو لگا پاک مقبوضہ کشمیر میں بڑا جھٹکا ، اربوں ڈالر کا پروجیکٹ لٹکا

وزارت خارجہ کے بین الاقوامی اقتصادی معاملات کے محکمہ کے ڈٓائریکٹر وانگ چیالونگ کے مطابق چین کے عالمی اثر و رسوخ کو مزید وسعت دینے کیلئے ایشیا ، افریقہ اور یوروپ میں کاروبار اور سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے مقصد سے شروع کئے گئے بی آر آئی پروجیکٹس کا تقریبا پانچواں حصہ کورونا وبا سے بری طرح متاثر ہوا ہے ۔

  • Share this:
ہندوستان سے کشیدگی کے درمیان چین کو لگا پاک مقبوضہ کشمیر میں بڑا جھٹکا ، اربوں ڈالر کا پروجیکٹ لٹکا
ہندوستان سے کشیدگی کے درمیان چین کو لگا پاک مقبوضہ کشمیر میں بڑا جھٹکا ، اربوں ڈالر کا پروجیکٹ لٹکا ۔ فائل فوٹو ۔

سرحد پر ہندوستان سے کشیدگی کے درمیان چین کو بڑا جھٹکا لگا ہے ۔ چین کے اربوں ڈالر والے انتہائی اہمیت کے حامل بیلٹ اینڈ روڈ انیشیئٹیو ( بی آر آئی ) پروجیکٹ کے تحت چلنے والے زیادہ تر منصوبے کورونا وائرس کی وجہ سے جزوی طور پر یا بری طرح متاثر ہیں ۔ چینی اہلکاروں نے یہ جانکاری دی ۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جو پروجیکٹس متاثر ہوئے ہیں ، ان میں ساٹھ ارب امریکی ڈالر والا سی پی ای سی پروجیکٹ بھی شامل ہے ۔


وزارت خارجہ کے بین الاقوامی اقتصادی معاملات کے محکمہ کے ڈٓائریکٹر وانگ چیالونگ کے مطابق چین کے عالمی اثر و رسوخ کو مزید وسعت دینے کیلئے ایشیا ، افریقہ اور یوروپ میں کاروبار اور سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے مقصد سے شروع کئے گئے بی آر آئی پروجیکٹس کا تقریبا پانچواں حصہ کورونا وبا سے بری طرح متاثر ہوا ہے ۔ ہانگ کانگ میں واقع ساوتھ چائنا مارننگ پوسٹ نے وانگ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ تقریبا چالیس فیصد پروجیکٹس بری طرح متاثر ہوئے ہیں اور تیس سے چالیس فیصڈ پروجیکٹس پر کچھ اثر پڑا ہے ۔


چین نے 2013 میں اس پروجیکٹ کو شروع کیا تھا


چین کے صدر شی جن پنگ نے 2013 میں اقتدار میں آنے پر بی آر ائی کو شروع کیا تھا ۔ اس کا مقصد سڑک اور سمندری راستے سے جنوب مشرقی ایشیا ، وسطی ایشیا ، خلیجی خطہ اور یوروپ کو جوڑنا ہے ۔ پاکستان کے بلوچستان میں واقع گوادر بندرگاہ کو چین کے شنجیانگ سے جوڑنے والے چین ۔ پاک اقتصادی کوریڈور ، بی آر آئی کا اہم پروجیکٹ ہے ۔

خیال رہے کہ ہندوستان نے سی پی ای سی کو لے کر چین سے اپنا احتجاج درج کرایا تھا کیونکہ یہ پاکستان کے قبضہ والے کشمیر سے ہوکر جارہا ہے ۔ اخبار کے مطابق ملیشیا ، بنگلہ دیش ، انڈونیشیا ، پاکستان ، کمبوڈیا اور سری لنکا سمیت کچھ ایشیائی ممالک نے چین کے فنڈنگ والے ان منصوبوں پر یا تو روک لگادی ہے یا انہیں موخر کردیا ہے ۔
First published: Jun 28, 2020 10:09 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading