உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سرحد پر براہموس کی تعیناتی کی خبروں سے چین بے چین، امن کے برعکس قدم قرار دیا

    سرحد کے پاس ہندوستان کے براہموس میزائل کی تعیناتی کے فیصلے پر چین تلملا اٹھا ہے۔ چین نے کہا ہے کہ ہندوستان کو سرحدی علاقوں میں امن اور استحکام کو قائم رکھنے کے لئے دونوں ممالک کے درمیان عام رائے کے برعکس کچھ نہیں کرنا چاہئے۔

    سرحد کے پاس ہندوستان کے براہموس میزائل کی تعیناتی کے فیصلے پر چین تلملا اٹھا ہے۔ چین نے کہا ہے کہ ہندوستان کو سرحدی علاقوں میں امن اور استحکام کو قائم رکھنے کے لئے دونوں ممالک کے درمیان عام رائے کے برعکس کچھ نہیں کرنا چاہئے۔

    • Agencies
    • Last Updated :
    • Share this:
    بیجنگ : سرحد کے پاس ہندوستان کے براہموس میزائل کی تعیناتی کے فیصلے پر چین تلملا اٹھا ہے۔ چین نے کہا ہے کہ ہندوستان کو سرحدی علاقوں میں امن اور استحکام کو قائم رکھنے کے لئے دونوں ممالک کے درمیان عام رائے کے برعکس کچھ نہیں کرنا چاہئے۔ چین کی وزارت دفاع کے ترجمان نے ایک میڈیا بریفنگ میں کہا کہ ہندوستان اور چین سرحد پر امن و استحکام قائم رکھنے کے لئے دونوں ممالک میں ایک عام رائے ہے۔
    ترجمان کہا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ ہندوستان سرحدی علاقے میں ٹکراو کی بجائے امن اور استحکام کے لئے مزید کام کر سکتا ہے۔ خیال رہے کہ ترجمان کا یہ بیان ان خبروں کے بعد آیا ہے ، جن میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان نے اضافی براہموس سپرسونک میزائل کی تعیناتی کی منظوری دی ہے، جنہیں مشرقی علاقے میں تعینات کیا جائے گا۔ تاکہ چین سے متصل سرحد پر اس کی صلاحیتوں کو بڑھایا جا سکے۔
    سیکورٹی ذرائع نے نئی دہلی میں کہا تھا کہ حکومت نے 4300کروڑ روپے کی لاگت سے چوتھے براہموس ریجمنٹ کی منظوری دی ہے۔ خبروں کا ذکر کرتے ہوئے پی ایل اے ڈیلی میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان کی حکومت نے براہموس سپرسونک میزائل کے تقریبا 100 نئے اعلی درجے کی فارمیٹس کی منظوری دے دی ہے ، جنہیں ملک کے شمال مشرق میں تعینات کیا جائے گا۔
    First published: