உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایرانی طیارہ چین کے گوانگ جھاو میں ہوا لینڈ، بم کی دھمکی نکلی جھوٹی، گھنٹوں تک مچا رہا ہنگامہ

    ایرانی طیارہ چین کے گوانگ جھاو میں ہوا لینڈ، بم کی دھمکی نکلی جھوٹی

    ایرانی طیارہ چین کے گوانگ جھاو میں ہوا لینڈ، بم کی دھمکی نکلی جھوٹی

    Iran-China Flight: تینوں ممالک میں ہنگامہ مچنے کے بعد آخر کار ایران کی فلائٹ نے چین کے گوانگ جھاو میں کامیاب لینڈنگ کی۔ ایران کی راجدھانی تہران سے اس فلائٹ نے پرواز بھری تھی۔ جب یہ ہندوستانی فضائیہ کے سرحد سے گزری تو اس پرواز میں بم ہونے کی دھمکی ملی۔ اس کی اطلاع ملتے ہی ہندوستانی فضائیہ کے جنگجو طیارہ اس کے پیچھے لگ گئے، لیکن مہان ایئر کی فلائٹ کے پائلٹ نے ہندوستان میں لینڈنگ سے منع کردیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      بیجنگ: ہندوستان، چین اور ایران کے لئے راحت بھری خبر ہے۔ تینوں ممالک میں ہنگامہ مچانے کے بعد خبر ملی ہے کہ مہان ایئر کی فلائٹ نمبر ڈبلیو-581 بغیر کسی پریشانی چین کے گنوانگ جھاو پہنچ گئی ہے۔ دراصل، اس فلائٹ نے ایران کی دارالحکومت تہران سے چین کے گنوانگ جھاو کے لئے پرواز بھری تھی۔ لیکن پیر کی صبح جب اس نے ہندوستانی فضائیہ علاقے کے اوپر انٹری کی تو کہیں سے بم کی دھمکی ملی۔ یہ دھمکی ملنے کے بعد ہندوستانی فضائیہ نے اس فلائٹ کو روکنے کے لئے اپنے جنگی طیارہ سخوئی سو-30MKI اس کے پیچھے بھیجے۔

      اس حادثہ سے متعلق ہندوستانی فضائیہ نے بیان میں کہا، ’طیارہ کو پہلے جے پور یا پھر چندی گڑھ میں اتارنے کا متبادل دیا گیا تھا۔ حالانکہ پائلٹ نے کہا کہ وہ دونوں میں سے کسی بھی ہوائے اڈے پر طیارہ نہیں اتارنا چاہتا ہے‘۔ بیان میں کہا گیا کہ کچھ دیر بعد تہران سے بم کی اطلاع کو نظر انداز کرنے کا پیغام ملا، جس کے بعد طیارہ نے اپنے آخری مقام کی طرف سفر جاری رکھا۔

      متعینہ عمل کے تحت کئے گئے اقدامات: ہندوستانی فضائیہ

      بیان میں کہا گیا ہے، ’ہندوستانی فضائیہ کے ذریعہ سبھی قدم وزارت شہری ہوا بازی اور شہری ہوابازی کی سیکورٹی بیورو (بی سی اے ایس) کے ساتھ مشترکہ طور پر مقررہ عمل کے تحت اٹھائے گئے تھے‘۔ اس میں بتایا گیا ہے کہ ہندوستانی فضائیہ علاقے میں پرواز کے دوران ایرانی طیارہ ہندوستانی فضائیہ کے قریبی رڈار کی نگرانی میں تھی۔ بتایا جا رہا ہے کہ ایرانی طیارہ جب ہندوستانی فضائیہ میں تھا، تب دہلی ہوائی اڈے کا ایئر ٹریفک کنٹرولر (اے ٹی سی) مسلسل ہندوستانی فضائیہ کے رابطے میں تھا۔
      یہ بھی پڑھیں۔

      ایرانی طیارہ میں بم کی اطلاع ملتے ہی ایکشن میں آئی اے ایف، پیچھے لگا دیئے اپنے 2 سخوئی جیٹ 

      ہندوستانی فضائیہ نے اٹھایا یہ بڑا قدم

      ہندوستانی فضائیہ (Indian Air Force) پیر کی صبح اس وقت حرکت میں آگئی، جب انڈین ایئر اسپیس کے اوپر سے گزر رہی ایرانی پیسنجر فلائٹ (Mahan Air Flight) میں بم پلانٹ ہونے کی دھمکی ملی۔ ایران کی پرائیویٹ ایئرلائنس کمپنی مہان ایئر کی یہ فلائٹ تہران سے چین کے گوانجھو (Mahan Air Tehran to Guangzhou Flight) جارہی تھی۔ نیوز ایجنسی اے این آئی کے مطابق، فلائٹ کے چیف پائلٹ نے دہلی کے آئی جی آئی ایئر پورٹ پر ایمرجنسی لینڈنگ کی اجازت مانگی۔ ایئر ٹریفک کنٹرول روم نے پائلٹ کو فلائٹ جے پور ایئر پورٹ پر لینڈ کرانے کی اجازت دی، لیکن اس نے منع کردیا۔ کچھ دیر بعد مہان ایئر کی یہ فلائٹ ہندوستانی فضائیہ علاقے سے باہر نکل کر چیف کی طرف بڑھ گئی۔

      ایرانی فلائٹ میں بم پلانٹ ہونے کی اطلاع ملتے ہی ہندوستانی سیکورٹی ایجنسیاں محتاط ہوگئیں۔ انڈین ایئر فورس نے بغیر کسی تاخیر کے پنجاب اور جودھپور ایئر بیس سے 2 سخوئی جنگجو طیارہ (IAF Su-30MKI Fighter Jets) کو ایرانی فلائٹ کے پیچھے لگا دیا۔ ہندوستانی فضائیہ علاقے سے باہر نکلنے تک دونوں سخوئی جیٹ اس فلائٹ پر نگرانی رکھے ہوئے تھے۔ چین کی طرف جانے کے باوجود ہندوستانی سیکورٹی ایجنسیاں اور ہندوستانی فضائیہ ایرانی فلائٹ کو ٹریک کرتے رہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: