உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یہاں کی خواتین منتخب کر سکتی ہیں کئی پارٹنرز، مردوں کے ساتھ سوتی تو ہیں لیکن رہتی نہیں

    علامتی تصویر

    علامتی تصویر

    دنیا کے کسی کونے میں ایسی جگہ بھی ہے جہاں لوگ بغیر شادی کئے ہی ساتھی کے ساتھ زندگی گزارتے ہیں۔

    • Share this:
      ہمارے سماج میں شادی کو زندگی کا ایک اہم حصہ مانا جاتا ہے۔ نئے دور میں کچھ لوگ لیو ان رلیشن شپ میں رہنا پسند کرتے ہیں، لیکن معاشرے کا ایک بڑا حصہ اسے قبول نہیں کرتا۔ ان سب تمام خیالات سے دور دنیا کے کسی کونے میں ایسی جگہ بھی ہے جہاں لوگ بغیر شادی کئے ہی ساتھی کے ساتھ زندگی گزارتے ہیں۔

      جنوبی- مغرب چین میں موسو قبیلے کے لوگوں کا ساتھی منتخب کرنے کا طریقہ بالکل مختلف ہے۔ یہاں کے لوگ میریج نہیں ’واکنگ میریج‘ کرتے ہیں۔ اس شادی میں عورت اہم کردار ادا کرتی ہے۔ یہ معاشرہ خواتین کےغلبہ والا ہے۔ مردوں کو منتخب اور اہم فیصلہ لینے تک کا حق خواتین کے پاس رہتا ہے۔ یہی نہیں خواتین ایک سے زیادہ پارٹنر منتخب کرنے کے لئے آزاد ہوتی ہیں۔ یہاں مرد ساتھ نہیں رہتے۔ وہ پورے دن فشینگ، شکار اور دوسرے کاموں میں مصروف رہتے ہیں۔ صرف وہ رات کو اپنے ساتھی کے پاس سونے کے لئے جاتے ہیں۔


      یہاں 13 سال کی لڑکی کو کسی بھی مرد سے محبت کرنے کی اجازت مل جاتی ہے۔ لڑکی کے بالغ ہونے کے بعد اسے اپنا الگ کمرہ دے دیا جاتا ہے، جہاں وہ اپنی پسند کے لڑکے کے ساتھ وقت گزار سکتی ہے۔ اس رشتہ میں مرد خواتین کی کسی طرح کی مالی مدد نہیں کرتے۔ بچے ہونے پر بھی اس کی پوری ذمہ داری والدہ اور اس کے گھروالوں پر رہتی ہے۔

      اس رشتہ کی بنیاد شادی یا کسی طرح کی رسم پر نہیں ٹکی ہوتی ہے۔ یہاں لوگ مرضی سے پوری زندگی ساتھ گزار سکتے ہیں یا اپنا پارٹنر بدل بھی سکتے ہیں۔ یہ سب جاننے میں جتنا عجیب لگ رہا ہے اتنا ہے نہیں۔ یہاں زیادہ تر لوگ اپنے پارٹنر کے لئے بہت ہی وفادار ہوتے ہیں۔ شادی جیسے کسی رشتہ کے بغیر بھی وہ محبت کرتے ہیں۔

      First published: