ہوم » نیوز » عالمی منظر

چین کی صفائی- شنجيانگ میں مسلمانوں پرظلم وزیادتی کی رپورٹ بے بنیاد اورمنفی

چین نےکہا ہےکہ بین الاقوامی برادری کویقین ہےکہ شنجيانگ میں دہشت گردی اورانتہا پسندی کا خاتمہ کرنےکی کوششیں اقوام متحدہ کی پالیسیوں کےتحت ہو رہی ہیں اورلوگوں کےتمام قانونی حقوق محفوظ ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 03, 2019 02:13 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
چین کی صفائی- شنجيانگ میں مسلمانوں پرظلم وزیادتی کی رپورٹ بے بنیاد اورمنفی
چین کے ایغورمسلمان۔

نئی دہلی: چین نے مغربی میڈیا میں صوبہ شنجيانگ میں ایغورمسلمانوں پرظلم و زیادتی کی رپورٹوں کوبے بنیاد، منفی اوردوہرے معیارکا ثبوت قراردیا ہےاورکہا ہےکہ بین الاقوامی برادری کویقین ہےکہ شنجيانگ میں دہشت گردی اورانتہا پسندی کا خاتمہ کرنےکی کوششیں اقوام متحدہ کی پالیسیوں کےتحت ہو رہی ہیں اورلوگوں کےتمام قانونی حقوق محفوظ ہیں۔

چینی سفارت خانےکی طرف سے یہاں جاری ایک بیان میں ہندوستان میں چین کےسفیرسن ويڈونگ نے ​​یہ باتیں کہیں۔ سن ويڈونگ نے ​​کہا کہ حال ہی میں کچھ مغربی میڈیا تنظیموں نے شنجيانگ سےکچھ نام نہاد لیک دستاویزات کی بنیاد پراورصوبے میں کاروباری تعلیم اور تربیت کو لےکربڑھا چڑھا کررائے پیش کی ہے۔ ان کےمنفی رویہ کایہ ثبوت ہےکہ وہ انسداد دہشت گردی اورتعصب کے خاتمےکےاقدامات کو لےکردوہرا معیاراپنا رہے ہیں اور شنجيانگ سےمتعلق معاملات کا استعمال چین کےاندرونی معاملات میں مداخلت کےلئےکر رہے ہیں۔

سفیرسن ويڈونگ نےکہا کہ شنجيانگ کا موضوع مکمل طورپرچین کا گھریلومعاملہ ہے۔ اس کامعاملہ نسل، مذہب یا انسانی حقوق سےمنسلک نہیں ہےبلکہ تشدد، دہشت گردی اورعلیحدگی پسندی سے نمٹنےکولےکرہے۔ سال 2015 سے چین نےشنجيانگ میں انسداد دہشت گردی اورشدت پسندی کے خاتمے کی کوششوں اور کاروباری تعلیم و تربیت کے کاموں پر سات قرطاس ابیض جاری کئے ہیں، جن میں بہت واضح طورپراورتفصیل سے بتایا گیا ہے کہ شنجيانگ میں کیا ہو رہا ہے۔

First published: Dec 03, 2019 02:08 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading