اپنا ضلع منتخب کریں۔

    چینی مسافروں کو کووڈ۔19 پابندیوں کاسامنا، چینی حکومت کا کئی ممالک کو انتباہ، جوابی کاروائی کی دھمکی

    واضح رہے کہ دسمبر کے آخر میں بیجنگ نے کہا تھا کہ ملک میں آنے والے مسافروں کو مزید قرنطینہ کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی، جس سے بہت سے چینی مسافروں کی ملک واپسی میں سہولت ہوئی۔ جب کہ کئی ممالک نے چین مسافروں پر پابندی عائد کی۔

    واضح رہے کہ دسمبر کے آخر میں بیجنگ نے کہا تھا کہ ملک میں آنے والے مسافروں کو مزید قرنطینہ کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی، جس سے بہت سے چینی مسافروں کی ملک واپسی میں سہولت ہوئی۔ جب کہ کئی ممالک نے چین مسافروں پر پابندی عائد کی۔

    واضح رہے کہ دسمبر کے آخر میں بیجنگ نے کہا تھا کہ ملک میں آنے والے مسافروں کو مزید قرنطینہ کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی، جس سے بہت سے چینی مسافروں کی ملک واپسی میں سہولت ہوئی۔ جب کہ کئی ممالک نے چین مسافروں پر پابندی عائد کی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • China
    • Share this:
      چین کی حکومت نے منگل کے روز ان ممالک کو منہ توڑ جواب دیا ہے، جو چین کے عوام یا چین سے ہوتے ہوئے گزرنے والے فضائی مسافروں پر پابندیاں لگارہی ہیں۔ چینی سرزمین سے بیرون ملک سفر کرنے والے مسافروں پر ایک درجن کے قریب ممالک کی طرف سے کووڈ۔19 ٹیسٹ کو لازمی کردیئے جانے کی مذمت کرتے ہوئے متنبہ کیا ہے کہ وہ جواب میں ان ممالک کے خلاف اقدامات کرسکتی ہے۔

      ریاستہائے متحدہ امریکہ، کینیڈا، فرانس اور جاپان ان متعدد ممالک میں شامل ہیں؛ جو اب چین سے آنے والے مسافروں کو آنے سے پہلے منفی کوویڈ ٹیسٹ دکھانے کو لازمی کردیا ہے، کیونکہ اب ان ممالک میں بھی کورونا کے کیسوں میں اضافے کا سامنا ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان ماؤ ننگ نے ایک باقاعدہ بریفنگ میں بتایا کہ کچھ ممالک نے صرف چینی مسافروں کو نشانہ بناتے ہوئے داخلے پر پابندیاں لگائی ہیں۔

      انہوں نے مزید کہا کہ اس میں سائنسی بنیادوں کا فقدان ہے اور کچھ طرز عمل ناقابل قبول ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ چین باہمی اصول کی بنیاد پر جوابی اقدامات کر سکتا ہے۔ پچھلے مہینے بہت کم انتباہ یا تیاری کے ساتھ اچانک صفر کووڈ۔19 کی سخت پابندیوں کو کم کرنے کے بعد چین میں کورونا انفیکشن میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: چین میں ایک دن میں 37 ملین افراد کو کووڈ۔19 کا خطرہ، نئے سال کی آمد کے ساتھ نئی مصیبت؟

      واضح رہے کہ دسمبر کے آخر میں بیجنگ نے کہا تھا کہ ملک میں آنے والے مسافروں کو مزید قرنطینہ کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی، جس سے بہت سے چینی مسافروں کی ملک واپسی میں سہولت ہوئی۔ جب کہ کئی ممالک نے چین کی جانب سے کورونا انفیکشن کے اعداد و شمار کے بارے میں شفافیت کی کمی اور مسافروں کو محدود کرنے کی وجوہات کے طور پر نئی شکلوں کے سامنے آنے کے خطرے کا حوالہ دیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں: قطر میں کورونا پابندیاں، چین سے آنے والے تمام مسافروں کو کووڈ۔19 ٹیسٹ کرانا ضروری



      اس طرح کی اموات کی درجہ بندی کے معیار کو ڈرامائی طور پر کم کرنے کے بعد چین نے دسمبر سے اب تک صرف 22 کووڈ اموات کا ذکر کیا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: