ہوم » نیوز » عالمی منظر

دنیابھر میں کورونا کا قہر : اٹلی میں 2100 سے زائد ہلاکتیں، فرانس میں انتخابات ملتوی

ٹلی میں خطرناک کورونا وائرس کی کوئی روک تھام نظر نہیں آ رہی ہے اور اس وائرس کی زد میں آخر اب تک 27980 لوگ اس کی زد میں جبکہ 2158 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 17, 2020 09:55 AM IST
  • Share this:
دنیابھر میں کورونا کا قہر : اٹلی میں 2100 سے زائد ہلاکتیں، فرانس میں انتخابات ملتوی
دنیا بھر میں کورونا کا قہر : اٹلی میں 2100 سے زائد ہلاکتیں، فرانس میں انتخابات ملتوی

اٹلی میں خطرناک کورونا وائرس کی کوئی روک تھام نظر نہیں آ رہی ہے اور اس وائرس کی زد میں آخر اب تک 27980 لوگ اس کی زد میں جبکہ 2158 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔شہری دفاعی محکمے کی صدر اینجیلو بیرلو نے پیر کو بتایا کہ اب تک 23073 لوگ اس وائرس کے زد میں آ چکے ہیں اورت قریباً 2749 مریض تندرست ہو گئے ہیں جبکہ 2158 لوگوں کی کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے بعد موت ہو گئی ہے۔ اٹلی میں 21 فروری کو کورونا وائرس سے موت کا پہلا معاملہ سامنے آیا تھا۔


اٹلی میں اتوار تک 20603 لوگ کورونا وائرس سے متاثر تھے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ان میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔ کورونا وائرس (كووڈ 19) کے قہر سے لڑنے کے لئے چین ماہر ڈاکٹر کی ایک ٹیم سمیت اٹلی کی مدد کی مدد کے واسطے طبی مصنوعات کی فراہمی بھی کرے گا۔ چین کی وزارت خارجہ نے ایک بیان جاری کرکے کہا ہے کہ اٹلی کی مدد کرنے کے لئے مستقبل میں چین ڈاکٹروں کی ایک اور ٹیم نیز ضروری طبی ادویات کی فراہمی اور انسانی مدد کرے گا۔


واضح رہے کہ چین کے ہوبائی صوبے کے دارالحکومت ووہان سے پاؤں پھیلانے والے جان لیوا کورونا وائرس کی زد میں اب تک دنیا کے 110 سے زائد ممالک آ چکے ہیں۔ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے خطرے کے درمیان اسے عالمی وبا اعلان کیا ہے۔چین میں اس وبا سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 3213 ہو گئی اور 80860 لوگ اس وائرس سے متاثر ہیں جبکہ اٹلی میں کورونا کی زد میں آنے سے ابھی تک 2158 لوگوں کی جان جا چکی ہے۔


مہلک کورونا وائرس (کووڈ ۔19) کے قہر کے مدنظر فرانس میں کارپوریشن انتخابات کے دوسرے مرحلے کی ووٹنگ کو ملتوی کردیا گیا ہے۔فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے پیر کے روز ملک کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ’ممبران پارلیمنٹ اور نیشنل اسمبلی کے ساتھ تبادلہ خیال کے بعد میں نے کارپوریشن انتخابات کے دوسرے مرحلے کو آگے طے کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ فرانس میں کورونا وائرس کی زد میں آنے سے اب تک 120 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں جبکہ 6600 افراد اس وائرس سے متاثر ہیں۔

فرانس میں اتوار کو ہوئے کارپوریشن انتخابات کے پہلے مرحلے کی ووٹنگ بہت کم ہوئی تھی جس کے پیش نظر اپوزیشن پارٹوں نے دوسرے مرحلے کی ووٹنگ کو ملتوی کرنے کا مطالبہ کیا تھا جو 22 مارچ کو ہونے والا تھا۔قابل ذکر بات یہ ہے کہ چین کے صوبہ ہوبئی کی راجدھانی ووہان میں پھیلے اس جان لیوا کورونا وائرس کی زد میں اب تک دنیا کے 110 سے زائد ممالک آچکے ہیں۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) نے کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے خطرے کے درمیان اسے عالمی وبا قرار دیا ہے۔

مراکش میں مہلک کورونا وائرس (کووڈ۔19) سے متاثر لوگوں کی تعداد بڑھ کر 37 ہوگئی ہے۔ وزارت صحت نے منگل کے روز جاری ایک بیان میں کہا کہ ایک چھوڑکر سبھی معاملے غیر ملکی شہریوں میں سامنے آئے ہیں۔ مراکش کے میکنیس، فیس، مراکیچ، آگادیر، رباط اور کیسابلانکا شہر میں یہ معاملے سامنے آئے ہی۔ وزارت نے بتایا کہ 37 مریضوں کی حالت فی الحال مستحکم ہے۔مراکش نے اس کے علاوہ کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لئے سبھی ریستوراں، کلب، سنیما ہال، جم اور مسجدوں کو بھی بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ وائرس اب تک دنیا کے 110 سے زیادہ ممالک میں پھیل چکا ہے۔

قبرص میں کورونا کے 13 نئے معاملوں کی تصدیق

قبرص میں منگل کے روز ہلاکت خیز کورونا وائرس (كووڈ 19) کے 13 نئے معاملے سامنے آئے ہیں جس کے بعد ملک میں وائرس سے متاثر افراد کی تعداد بڑھ کر 46 ہو گئی ہے۔وزارت صحت نے کہا’’کورونا وائرس کی زد میں آئے 13 نئے لوگوں میں سے دس طبی عملے کے اہلکار ہیں جو حال ہی میں ایک مریض کے رابطے میں آئے تھے ان کےعلاوہ ان میں ایک برطانیہ اور ایک یونان کا شہری شامل ہے‘‘۔حکومت نے کورونا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے ملک میں غیر ملکیوں کے داخلے پر روک بھی لگا دی ہے۔واضح رہے کہ چین کے ہوبائی صوبے کے دارالحکومت ووہان سے پاؤں پھیلانے والے جان لیوا کورونا وائرس کی زد میں اب تک دنیا کے 110 سے زائد ممالک آ چکے ہیں۔ عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے خطرے کے درمیان اسے عالمی وبا اعلان کیا ہے۔
First published: Mar 17, 2020 09:55 AM IST