உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Covid-19 Symptoms in Kids:کیا ریکوری کے بعد بھی آپ کے بچوں میں ہے کورونا کی علامت؟رہیں محتاط، اسٹڈی میں ہوا چونکانے والا انکشاف

    ڈنمارک میں کی گئی ریسرچ میں بچوں میں کوویڈ کی علامت کو لے کر تشویشناک رپورٹ آئی سامنے۔

    ڈنمارک میں کی گئی ریسرچ میں بچوں میں کوویڈ کی علامت کو لے کر تشویشناک رپورٹ آئی سامنے۔

    Covid-19 Symptoms in Kids: لیسنٹ کی ریسرچ کے مطابق، 0-14 سال کی عمر کے 46 فیصد بچوں میں کووڈ کی بالغوں اور بوڑھوں کی طرح طویل علامات پائی گئیں۔ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ انفیکشن سے صحت یاب ہونے کے بعد بھی یہ بچے کم از کم دو ماہ تک طویل کووِڈ مسائل کا شکار ہو سکتے ہیں۔

    • Share this:
      Covid-19 Symptoms in Kids: پوری دنیا میں کورونا کے خلاف ابھی بھی جنگ جاری ہے۔ کورونا سے متاثرہ مریض کے صحت یاب ہونے کے بعد بھی کئی لوگوں میں لانگ کووڈ-19 کے مسائل (Long Covid Infection) دیکھے جا رہے ہیں۔ ان میں سے زیادہ تر مسائل بالغوں میں دیکھے جارہے ہیں۔ کورونا(Corona) سے صحت یاب ہونے کے بعد بھی کئی دنوں سے لوگوں میں تھکاوٹ اور کمزوری کے مسائل عام دیکھے گئے ہیں لیکن اب بچوں میں بھی طویل عرصے سے کووِڈ کے کیسیز دیکھنے کو مل رہے ہیں۔ کورونا سے صحت یاب ہونے کے بعد بھی بچوں میں کئی مسائل دیکھے گئے ہیں۔ ڈنمارک میں ہونے والی ایک تحقیق میں انکشاف ہوا ہے کہ بیماری سے صحت یاب ہونے کے بعد بھی تقریباً 46 فیصد بچوں میں کم از کم 2 ماہ تک کورونا جیسی علامات(Covid Symptoms) ظاہر ہو رہی ہیں۔

      اسٹڈی کے دوران، محققین نے ڈنمارک میں بچوں کے قومی سطح کے نمونے کا استعمال کیا اور انفیکشن کی سابقہ ​​تاریخ والے بچوں کے کنٹرول گروپ کے ساتھ COVID پازیٹیو کیسیز کاموازانہ کیا۔ یہ تحقیق دی لانسیٹ چائلڈ اینڈ ایڈولیسنٹ ہیلتھ جرنلز میں شائع ہوئی ہے۔

      بچوں میں لانگ کوویڈ انفیکشن کی علامت
      لیسنٹ کی ریسرچ کے مطابق، 0-14 سال کی عمر کے 46 فیصد بچوں میں کووڈ کی بالغوں اور بوڑھوں کی طرح طویل علامات پائی گئیں۔ تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ انفیکشن سے صحت یاب ہونے کے بعد بھی یہ بچے کم از کم دو ماہ تک طویل کووِڈ مسائل کا شکار ہو سکتے ہیں۔ 0-3 سال کی عمر کے گروپ میں، 40 فیصد بچوں کو جن میں COVID-19 کی تشخیص ہوئی ہے (1,194 بچوں میں سے 478) دو ماہ سے زیادہ عرصے تک علامات کا تجربہ کرتے ہیں۔ اسی 4-11 عمر کے گروپ میں یہ تناسب 38 فیصد تھا جبکہ 12-14 عمر کے گروپ میں یہ تناسب 46 فیصد تھا۔

      کورونا سے صحتیاب ہونے کے بعد بچوں میں کس طرح کی علامت؟
      بچوں میں لانگ کووڈ (COVID-19) کی 23 سب سے عام علامات تحقیق کے دوران پوچھی گئیں۔ جسم پر خارش اور پیٹ میں درد سب سے زیادہ عام طور پر 0-3 سال کے بچوں میں دیکھا جاتا ہے۔ یہی مسائل 4-11 سال کی عمر کے بچوں میں یادداشت، توجہ مرکوز کرنے اور جسم پر دھبے کے ساتھ دیکھے گئے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      COVID-19: ہندوستان میں جلد ہی mRNA ویکسین ہوگی دستیاب! کیا یہ گیم چینجر ہوگی؟

      یہ بھی پڑھیں:
      Corona Fourth Wave:ماہرین نے ملک میں کورونا کی چوتھی لہر سے کیا انکار

      ایک ہی وقت میں، 12-14 سال کی عمر کے بچوں میں تھکاوٹ، یاد رکھنے یا توجہ مرکوز کرنے میں پریشانی یہ سب سے عام علامات تھیں۔ بی ایل کے اسپتال، دہلی کے شعبہ اطفال کے ڈائریکٹر اور سربراہ ڈاکٹر جے ایس بھسین بھی مانتے ہیں کہ کچھ بچوں کو صحت یاب ہونے میں زیادہ وقت لگتا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: