ہوم » نیوز » عالمی منظر

انتہائی شرمناک! معصوم کے ساتھ گھر میں کام کرنے والے شخص نے کیا غلط کام، برہنہ حالت میں ملی بچی

لڑکی شام کو تقریبا 8. 30 بجے تک دیگر بچوں کے ساتھ کھیل رہی تھی اچانک وہ غائب ہوگئی۔ والدین اور پڑوسیوں نے اسے بہت کھوجا۔ بچی کو کھوجتے ہوئے اس کی ایک سینڈل ملی اور آگے ایک پگ ڈنڈی کے پاس بچی بیہوش اور نیم برہنہ حالت میں پائی گئی۔ بچی کے جسم پر شدید تشدد کے نشان ملے ہیں اور ملزم بیٹن کو بھی وہاں سے کچھ ہی دوری پر پکڑا گیا ہے۔

  • Share this:
انتہائی شرمناک! معصوم  کے ساتھ گھر میں کام کرنے والے شخص نے کیا غلط کام، برہنہ حالت میں ملی بچی
علامتی تصویر

جنوب مغرب کولمبیا کے ایک اوئیلا (Huila) کے اسپتال میں سولوم سیگورا ویگا نام کی 4 سال کی ایک بچی کی آئی سی ہو میں موت ہوگئی۔ 27 سالہ سیبیسٹین ملیس بیٹن نے بچی کو بہت مارا پیٹا اور اس کا ریپ کیا۔ اس گھنونے واقعے میں بچی کو بہت کافی شدید چوٹیں آئی تھیں۔ اس کے کئی جسم کے حصوں میں بہت زیادہ چوٹیں آئی ہیں اور ساتھ ہی اسے دماغی چوٹیں بھی آئی۔ ڈاکٹروں نے اس کی موت کی وجہ ریفریکٹری انٹرکرینیل ہائیہر ٹینشن (refractory intracranial hypertension) باتا۔

برہنہ حالت میں ملی بچی

لڑکی شام کو تقریبا 8. 30 بجے تک دیگر بچوں کے ساتھ کھیل رہی تھی اچانک وہ غائب ہوگئی۔ والدین اور پڑوسیوں نے اسے بہت کھوجا۔ بچی کو کھوجتے ہوئے اس کی ایک سینڈل ملی اور آگے ایک پگ ڈںڈی کے پاس بچی بیہوش اور نیم برہنہ حالت میں پائی گئی۔ بچی کے جسم پر شدید تشدد کے نشان ملے ہیں اور ملزم بیٹن کو بھی وہاں سے کچھ ہی دوری پر پکڑا گیا ہے۔

مقامی پولیس نے اسے قتل اور ریپ کے الزام میں حراست میں لے لیا ہے۔ پکڑنے کے بعد بیٹن کو ایک کلینک میں چھپانا پڑا کیونکہ مقامی لوگ اس سے ناراض تھے اور وہ اسے مار کر ڈالنا چاہتے تھے۔ ریپ کا ملزم بیٹن بچی کے والدین کے یہاں کام کرتا تھا۔

ملزم ریپ سے انکار کر رہا ہے اور دے رہا ہے یہ دلیل۔۔

بیٹن بچی کے ریپ کے الزام سے انکار کررہا ہے اور اپنی صفائی میں یہ کہہ رہا ہے کہ اس کی بھی اتنی ہی عمر کی بچی ہے اور وہ یہ کام نہیں کرسکتا۔۔ افسران نے بتایا ہے کہ اس سال اوئیلا میں بچوں کے جنسی استحصال کے 190 معاملے درج کئے گئے ہیں۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jul 07, 2020 08:10 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading