ہوم » نیوز » عالمی منظر

ایران کے جوہری پلانٹ ’نطنز‘ پراسرائیل کا سائبر حملہ ، ایران نے کہا : صحیح وقت پر لیا جائے گا بدلہ

اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد نے ایران کی جوہری تنصیب کو سائبر حملے کا نشانہ بنایا ہے ۔ اسرائیلی میڈیا نے بتایا کہ یہ ایک سائبر حملہ تھا ، جو موساد نے کیا ہے جس کے نتیجے میں تنصیب کو ٹھیک ٹھاک نقصان پہنچا ہے ۔

  • UNI
  • Last Updated: Apr 12, 2021 02:16 PM IST
  • Share this:
ایران کے جوہری پلانٹ ’نطنز‘ پراسرائیل کا سائبر حملہ ، ایران نے کہا : صحیح وقت پر لیا جائے گا بدلہ
ایران کے جوہری پلانٹ ’نطنز‘ پراسرائیل کا سائبر حملہ ، ایران نے کہا : صحیح وقت پر لیا جائے گا بدلہ ۔ تصویر : رائٹر ۔

تہران : اسرائیلی خفیہ ایجنسی موساد نے ایران کی جوہری تنصیب کو سائبر حملے کا نشانہ بنایا ہے ۔ اسرائیلی میڈیا نے بتایا کہ یہ ایک سائبر حملہ تھا ، جو موساد نے کیا ہے جس کے نتیجے میں تنصیب کو ٹھیک ٹھاک نقصان پہنچا ہے ۔ اس حملے کے بعد نطنز میں بجلی منقطع ہوگئی تھی ۔ ادھر ایرانی خبر رساں ایجنسی کے مطابق محکمہ ایٹمی توانائی کے ترجمان بہروز کمالوندی نے نطنز میں واقع جوہری تنصیب میں حادثے کی تصدیق کی ۔


ایرانی جوہری توانائی تنظیم نے پنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس تنصیب پر دہشت گردانہ حملہ ہوا ہے ۔ ایران کے جوہری توانائی ادارے کے سربراہ علی اکبر صالحی نے بھی اس حملہ کو ایٹمی دہشت گردی قرار دیا ۔ ادھر ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے بھی واقعہ کی ذمہ داری اسرائیل پر عائد کرتے ہوئے کہا کہ اس کا بدلہ لیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ایران نے پابندیوں کے خاتمہ کے سلسلے میں کامیابیاں حاصل کی ہیں ، جس کا اسرائیل بدلہ لینا چاہتا ہے ۔


محکمہ ایٹمی توانائی کے ترجمان بہروز کمالوندی نے اپنے بیان میں کہا کہ حادثے میں جوہری تنصیب کا کوئی اہلکار زخمی نہیں ہوا اور نہ ہی پلانٹ کو نقصان پہنچا ہے ۔ انہوں نے یورینیم کے پھیلنے کو بھی خارج از امکان قرار دیا ۔ خیال رہے ایک روز قبل ہی ایران نے اس جوہری تنصیب میں 164 آئی آر-6 سینٹری فیوجز کا باقاعدہ افتتاح اور نئی یورینیم افزودگی آئی آر-9 کا عمل شروع کیا تھا ۔


ایران اسرائیل سے نطنز حملہ کا بدلہ لے گا : وزارت خارجہ

ایران کی وزارت خارجہ نے پیر کے روز کہا کہ وہ وقت آنے پر نطنزجوہری پلانٹ پر حملے کا اسرائیل سے انتقام لے گا۔ پیر کے روزوزارت خارجہ کے ترجمان سعید خطیب زادہ نے کہا’’ ایران صحیح وقت آنے پر کئے گئے سائبر حملے کا بدلہ اسرائیل سے لے گا‘‘۔ خطیب زادہ نے ایرانی سرزمین پر نطنز نیوکلیئر پلانٹ میں ہونے والی بلیک آؤٹ کو جوہری دہشت گردی کا فعل قرار دیا۔ انہوں نے بتایا کہ یونٹ کو نقصان پہنچا ہے جہاں حساس سینٹری فیوجز نصب تھے۔

قابل ذکر ہے کہ یہ واقعہ ایسے وقت پیش آیا ہے  ، جب آسٹریا کی راجدھانی ویانا میں یوروپی یونین کے توسط سے عالمی جوہری معاہدہ کے دیگر فریقین کی موجودگی میں امریکہ اور ایران کے درمیان مذاکرات جاری ہیں ، جس میں امریکہ کی 2015 کے عالمی معاہدہ میں واپسی اور ایران پر سے عائد پابندیوں کے خاتمے پر گفتگو جاری ہے ۔ خیال رہے 2018 میں امریکہ کے اس وقت کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اس معاہدے سے علاحدگی کا فیصلہ کیا تھا ۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال جولائی میں بھی نطنز کی جوہری تنصیب میں دھماکہ ہوا تھا ، جس کی ذمہ داری ایران نے اسرائیل پر عائد کی تھی ۔ دوسری جانب امریکہ ایران کے اس جوہری تنصیب کا ہمیشہ سے مخالف رہا ہے اور وقتاً فوقتاً اس پلانٹ کو بند کرنے کیلئے کہتا رہا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 12, 2021 02:16 PM IST