ہوم » نیوز » عالمی منظر

ڈیموکریٹک پارٹی نے ڈونالڈ ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے کے لئے نائب صدر مائیک پینس کو دیئے صرف 24 گھنٹے

ہاوس اسپیکر نینسی پیلوسی نے اتوار کو ساتھی ڈیموکریٹس کو لکھے ایک خط میں کہا کہ صبح ایک ریزولیشن لیا جائے، جس میں نائب صدر مائیک پینس کو 25 ویں ترمیم کو عمل میں لانے کے لئے کابینہ کو بلائے جانے کے لئے کہا جائے، جس میں ان کا کردار اور ذمہ داریوں کو نبھانے میں ناکام رہنے کا اعلان کیا جائے، جس کے فوراً بعد نائب صدر کارگزار صدر کے طور پر اختیارات کا استعمال کرسکیں گے۔

  • Share this:
ڈیموکریٹک پارٹی نے ڈونالڈ ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے کے لئے نائب صدر مائیک پینس کو دیئے صرف 24 گھنٹے
ڈیموکریٹک پارٹی نے ڈونالڈ ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے کے لئے نائب صدر مائیک پینس کو دیئے صرف 24 گھنٹے

واشنگٹن: امریکہ میں ڈیموکریٹک پارٹی (Democratic Party) نے پیر کو ایوان نمائندگان میں تجویز منظور کرنے کا منصوبہ بنایا ہے، جس میں نائب صدر مائیک پینس (Mike Pence) کو صدر ڈونالڈ ٹرمپ (Donald Trump) کو عہدے سے ہٹانے کے لئے آئین کے 25 ویں ترمیمی قانون کو نافذ کرنے کی گزارش کی ہے۔ اس دوران یہ بھی مطالبہ کیا گیا ہے کہ ڈونالڈ ٹرمپ کو ان کے عہدے کے فرائض اور اختیارات کا کامیابی سے ذمہ داری ادا نہ کرنے میں نا اہل قرار دیا جائے۔ ڈیموکریٹس نے مائیک پینس کو اس عمل کو مکمل کرنے کے لئے صرف 24 گھنٹے دیئے ہیں۔ اس کے بعد منگل کو 6 جنوری کو اپنے حامیوں کے ذریعہ کیپٹل بلڈنگ میں فساد اکسانے کے الزامات میں صدر ڈونالڈ ٹرمپ پر مواخذے کا عمل چلانے کا قانون پیش کریں گے۔ ڈونالڈ ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے کے ڈیموکریٹس کے منصوبے کا پہلا حصہ یہ تھا کہ صدر ڈونالڈ ٹرمپ خود استعفیٰ دے دیں، لیکن یہ ممکن نہیں ہوسکا۔


نینسی پیلوسی نے ڈیموکریٹس کو لکھا خط


ہاوس اسپیکر نینسی پیلوسی نے اتوار کو ساتھی ڈیموکریٹس کو لکھے ایک خط میں کہا کہ صبح ایک ریزولیشن لیا جائے، جس میں نائب صدر مائیک پینس کو 25 ویں ترمیم کو عمل میں لانے کے لئے کابینہ کو بلائے جانے کے لئے کہا جائے، جس میں ان کا کردار اور ذمہ داریوں کو نبھانے میں ناکام رہنے کا اعلان کیا جائے، جس کے فوراً بعد نائب صدر کارگزار صدر کے طور پر اختیارات کا استعمال کرسکیں گے۔


اس دوران یہ بھی مطالبہ کیا گیا ہے کہ ڈونالڈ ٹرمپ کو ان کے عہدے کے فرائض اور اختیارات کا کامیابی سے ذمہ داری ادا نہ کرنے میں نا اہل قرار دیا جائے۔
اس دوران یہ بھی مطالبہ کیا گیا ہے کہ ڈونالڈ ٹرمپ کو ان کے عہدے کے فرائض اور اختیارات کا کامیابی سے ذمہ داری ادا نہ کرنے میں نا اہل قرار دیا جائے۔


ٹرمپ مواخذے کے عمل کو استعمال کرنے سے گریزاں تھے
کہا جارہا ہے کہ نائب صدر مائیک پینس 25 ویں ترمیم یا مواخذہ عمل کے استعمال کے ذریعے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کو ہٹانے سے گریزاں تھے۔ انہیں خوف تھا کہ اس قسم کی کارروائی کی وجہ سے، ڈونالڈ ٹرمپ جلدبازی میں کوئی براہ راست قدم نہ اٹھالیں۔ ذرائع کے حوالے سے یہ پتہ چلا ہے کہ پینس بھی ڈونالڈ ٹرمپ کے زیادہ غیر مستحکم ہونے کی صورت میں پینس نے 25 ویں ترمیم پر عمل درآمد کے آپشن پر بھی غور کیا ہے۔ دارالحکومت کی عمارت میں طوفان کا ذمہ دار ڈیموکریٹس، ڈونالڈ ٹرمپ کو قرار دے رہے ہیں۔ ٹرمپ، ان کے بیٹے ٹرمپ جونیئر اور ان کے وکیل روڈی گیولیانی نے ان کیپٹل بلڈنگ میں فساد بھڑکانے کی کوشش کی جو کیپیٹل بلڈنگ میں ہنگامہ آرائی کر رہے تھے۔

صدر اور نائب صدر کا اندرونی معاملہ

ڈونالڈ ٹرمپ نے مائیک پینس پر نائب صدر پر ہمت نہ دکھانے کا الزام لگایا۔ وہیں پینس کو اس بات کا افسوس ہے کہ صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے قریبی ہونے کے باوجود انہوں نے حران کے وقت ان کی اور فیملی کی کوئی خبر نہیں لی۔ پینس نے ابھی تک ڈونالڈ ٹرمپ کی عوامی تنقید نہ کرکے اپنے پتے کو چھپا رکھے ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jan 11, 2021 11:53 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading