ہوم » نیوز » عالمی منظر

شادی کی پہلی رات میں خود کو ورجن دکھانے کیلئے آپریشن کروا رہی ہیں لڑکیاں ، جانیں آخر کیوں ؟

ڈاکٹرس بھی پرائیویٹ پارٹ کا یہ چھوٹا سا آپریشن کرکے لاکھوں روپے کما رہے ہیں ۔ لندن میں ایسے 22 کلینکس کا پتہ چلا ہے ۔

  • Share this:
شادی کی پہلی رات میں خود کو ورجن دکھانے کیلئے آپریشن کروا رہی ہیں لڑکیاں ، جانیں آخر کیوں ؟
علامتی تصویر

شادی کی پہلی رات یعنی سہاگ راگ میں خود کو باکرہ ( ورجن ) دکھانے کیلئے کئی لڑکیاں خفیہ کلینک کا رخ کررہی ہیں ۔ ڈاکٹرس بھی پرائیویٹ پارٹ کا یہ چھوٹا سا آپریشن کرکے لاکھوں روپے کما رہے ہیں ۔ لندن میں ایسے 22 کلینکس کا پتہ چلا ہے ، جہاں خواتین نے خود کوورجن دکھانے کیلئے پردہ بکارت کی سرجری کرائی تھی ۔


ڈیلی میل کی ایک رپورٹ کے مطابق لندن میں ایسی 22 کلینکس کے نام سامنے آئے ہیں ، جہاں خواتین قدامت پسند نظریات کے حامل کنبہ کے دباو کی وجہ سے پردہ بکارت کی سرجری کراچکی ہیں تاکہ خود کو باکرہ دکھا سکیں ۔ اس آپریشن کے ذریعہ کنواری عورت کی اندام نہانی کے گرد پائی جانے والی باریک سے جھلی ، جو سیکس کے دوران ٹوٹ جاتی ہے ، دو دوبارہ بنادی جاتی ہے ۔ تاکہ جب خاتون شادی کی پہلی رات اپنے ساتھی کے ساتھ جسمانی تعلقات قائم کرتے تو اس دوران وہ خود کو باکرہ ثابت کرسکے ۔


۔ ڈاکٹرس بھی پرائیویٹ پارٹ کا یہ چھوٹا سا آپریشن کرکے لاکھوں روپے کما رہے ہیں ۔ علامتی تصویر ۔
۔ ڈاکٹرس بھی پرائیویٹ پارٹ کا یہ چھوٹا سا آپریشن کرکے لاکھوں روپے کما رہے ہیں ۔ علامتی تصویر ۔


دی گائن سینٹر لندن کی ایک کلینک ہے جو پردہ بکارت کے آپریشن کا کام کرتی ہے ۔ تاکہ شادی کی پہلی رات لڑکی خود کو باکرہ ثابت کرنے دباو سے باہر نکل سکے ۔ سماج میں کئی قدامت پسند لوگوں کا ایسا ماننا ہے کہ اگر لڑکی کا پردہ بکارت پھٹا ہوا ہے تو وہ باکرہ نہیں ہے ۔ یعنی شادی سے پہلے کسی لڑکے کے ساتھ اس کے جسمانی تعلقات قائم ہوچکے ہیں ۔ کئی مرتبہ یہی تصور شادی ٹوٹنے کی وجہ بھی بن جاتا ہے ۔

رپورٹ میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ مشرق وسطی کے علاقوں اور ایشیائی خواتین گھر والوں اور سماج کے دباو کی وجہ سے پردہ بکارت کو دوبارہ حاصل کرنے کیلئے یہ آپریشن کروا رہی ہیں ۔ ڈاکٹرس بھی اس سماجی دباو کا فائدہ اٹھاتے ہوئے لاکھوں کما رہے ہیں ۔
First published: Jan 13, 2020 12:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading